اسٹیٹ بینک نے ملازمین کو تنخواہ کی ادائیگی کیلئے رعایتی قرضہ اسکیم متعارف کرادی

قرض کی اصل رقم کی ادائیگی 2 سال جبکہ مزید 6 ماہ رعایت بھی ملے گی،اسٹیٹ بینک

کراچی: (پاکستان فوکس آن لائن)اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے نئی اسکیم متعارف کراتے ہوئے کمپنیوں کو ملازمین کی تنخواہوں کے برابر رقم رعایتی شرح سود پر قرض دینےکا فیصلہ کیا ہے۔اسٹیٹ بینک نے کمپنیوں کی جانب سے اپریل تا جون لوگوں کو ملازمتوں سے برطرف نہ کرنے کی ترغیب کے لیے یہ اسکیم متعارف کرائی ہے۔ اسٹیٹ بینک کے مطابق کمپنیوں کو ملازمین کی تنخواہوں کی مجموعی رقم کے مساوی رقم رعایتی شرح سود پر دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور 20 کروڑ روپے تک تنخواہیں دینے والی کمپنیز کو 4 سے 5 فیصد شرح سود پر قرض ملے گا۔
اسٹیٹ بینک اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ 50 کروڑ تک تنخواہیں دینے والی کمپنیز کو 50 فیصد فنانسنگ سہولت ملے گی جبکہ تین ماہ کی تنخواہوں کے لیے بینکس کسی بھی قسم کی فیس نہ لے سکیں گے۔مرکزی بینک کے مطابق قرض کی اصل رقم کی ادائیگی 2 سال جبکہ مزید 6 ماہ رعایت بھی ملے گی۔
خیال رہے کہ ملک میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے لاک ڈاؤن جاری ہے جس کے باعث معیشت پر منفی اثرات پڑے ہیں اور دیہاڑی دار طبقہ بھی شدید پریشان ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *