داعش کا بھارت میں اپنا ’’صوبہ‘‘ قائم کرنے کا دعویٰ

دہشت گرد تنظیم داعش نے کشمیر کے متنازع خطے میں گروپ سے مبینہ تعلق کی بنا پر جنگجو کی ہلاکت کے بعد پہلی بار دعویٰ کیا ہے کہ اس نے بھارت میںصوبہ قائم کر لیا ہے۔غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق داعش کی اعماق نیوز ایجنسی نےوِلایہ آف ہندکے نام سے نئے صوبے کا اعلان کیا۔نیوز ایجنسی کے بیان میں دعویٰ کیا گیا کہ کشمیر کے ضلع شوپیاں اور آمشی پورا میں داعش کے حملوں میں بھارتی فوجی ہلاک ہوئے۔ داعش کا بیان بھارتی پولیس کے اس بیان سے مطابقت رکھتا ہے کہ شوپیاں میں کارروائی کے دوران علیحدگی پسند اشفاق احمد صوفی ہلاک ہوا۔ عراق اور شام میں پسپا ہونے کے بعد نئے صوبے کے قیام کا بیان داعش کی جانب سے اپنی طاقت ثابت کرنے کی کوشش معلوم ہوتا ہے۔
داعش کی طرف سے ان دنوں حملہ کرکے فرار ہونے اور خودکش حملوں جیسے واقعات سامنے آرہے ہیں اور ایسٹر کے موقع پر سری لنکا میں کئی دھماکوں کی ذمہ داری بھی اسی نے قبول کی تھی، جس میں 250 سے زائد افراد ہلاک ہوئے تھے۔شدت پسندوں کی نگرانی کرنے والے سائٹ اِنٹیل گروپ کی ڈائریکٹر ریٹا کاٹز نے کہا کہ اس خطے میں صوبے کے قیام کا اعلان جہاں حقیقت میں اس کا کوئی کنٹرول نہیں ہے، مضحکہ خیز ہے تاہم اسے معمولی نہیں سمجھا جاسکتا۔انہوں نے کہا کہ دنیا شاید اس پیشرفت کو نظر انداز کردے لیکن اس طرح کے غیر محفوظ خطوں میں شدت پسندوں کے لیے مثبت علامت ہو سکتا ہے جس سے انہیں داعش کی خلافت کا نقشہ دوبارہ تیار کرنے میں مدد مل سکتی ہے۔فوجی حکام اور داعش کے ہمدرد میگزین کو اشفاق احمد صوفی کے انٹرویو کے مطابق اشفاق احمد، داعش سے منسلک ہونے سے قبل ایک دہائی سے زائد عرصے تک کشمیر میں کئی علیحدگی پسند گروپوں میں شامل رہا۔پولیس اور فوجی ذرائع کے مطابق وہ سیکیورٹی فورسز پر دستی بموں کے کئی حملوں میں ملوث رہا۔پولیس ترجمان کا کہنا تھا کہ اشفاق صوفی شاید وہ آخری شدت پسند تھا جو داعش سے منسلک تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *