پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان مذاکرات کامیاب، معاہدہ طے پا گیا

اسلام آباد: (پاکستان فوکس آن لائن) وزیراعظم عمران خان کے مشیر برائے خزانہ، ریونیو اور معاشی امور ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ نے عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) سے قرضے کے حصول کا معاہدہ طے پانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ آئی ایم ایف سے 3 سال کے دوران 6 ارب ڈالر ملیں گے۔تفصیلات کے مطابق پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان بیل آؤٹ پیکیج پر معاہدہ طے پاگیا ہے۔پاکستان کے مشیر خزانہ حفیظ شیخ نے بتایا کہ آئی ایم ایف نے پاکستان کو بیل آؤٹ پیکیج دینے کیلئے رضامندی ظاہر کردی ہے۔ آئی ایم ایف پاکستان کو 6 ارب ڈالر دے گا جس کی ادائیگی 39 ماہ میں کرنی ہوگی۔انہوں نے بتایا کہ عالمی مالیاتی فنڈ تین سال میں پاکستان کو6 ارب ڈالر دے گا۔ مشیر خزانہ نے کہا کہ بجلی صرف300 سے زائد یونٹ استعمال کرنے والوں کیلئے مہنگی کی جائے گی۔
سرکاری ٹی وی کے ایک پروگرام میں انٹرویو دیتے ہوئے مشیر خزانہ نے بتایا کہ ڈالر کی قیمت کا تعین اسٹیٹ بینک آف پاکستان مارکیٹ ریٹ پر کرے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ اگر حکومت اصلاحات کرنے میں کامیاب ہوگئی تو یہ آئی ایم ایف کا آخری پیکیج ہوگا۔حفیظ شیخ نے بتایا کہ حکومت کی کوشش ہوگی کہ عام آدمی پر فرق نہ پڑے مہنگائی صرف کچھ ایریاز میں کریں گے۔ انہوں نے بتایا کہ آئی ایم ایف کا بورڈ معاہدے کی حتمی منظوری دے گا۔انٹرویو میں حفیظ شیخ کا کہنا تھا کہ پاکستان نے آئی ایم ایف کو یقین دہانی کرائی ہے کہ اسٹیٹ بینک کو خومختار رکھا جائے گا۔ عالمی بینک اور ایشیائی ترقیاتی بینک سے بھی 2 سے 3 ارب ڈالر مل سکتے ہیں اور پاکستان کو کم شرح سود پر قرض ملے گا۔یاد رہے کہ پاکستان اور انٹرنیشنل مانیٹری فنڈز( آئی ایم ایف) کے وفد کے درمیان 29 اپریل سے مذاکرات جاری تھے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *