اسلام آباد لاک ڈاؤن کی تاریخ کا تعین مل کر کرینگے، جے یو آئی اور ن لیگ کا اتفاق

لاہور: (پاکستان فوکس آن لائن)مسلم لیگ (ن) اور جے یو آئی (ف) آزادی مارچ پر متفق ہو گئے، تاریخ کا اعلان سنٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کی سفارشات کے بعد ہوگا۔تفصیلات کے مطابق لاہور میں میاں شہباز شریف اور مولانا فضل الرحمان کے درمیان ملاقات میں حکومت کیخلاف آزادی مارچ پر اتفاق ہو گیا ہے۔ اس اہم ملاقات میں دیگر اپوزیشن جماعتوں کے پاس جانے کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے۔
ملاقات کے بعد میڈیا نمائندوں سے گفتگو میں جمعیت علمائے اسلام (ف) کے رہنما اکرم درانی کا کہنا تھا کہ اپنے قائد کی جانب سے شریف برادران کا شکر گزار ہوں۔ آزادی مارچ ہمارا نہیں بلکہ 22 کروڑ عوام کا ہے۔ اس معاملے پر مرکزی مجلس عاملہ کے اجلاس میں مشاورت کریں گے جبکہ تمام اپوزیشن جماعتوں کے پاس بھی جائیں گے۔ مل کر آزادی مارچ کی تاریخ کا تعین کریں گے۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے ن لیگی رہنما احسن اقبال کا کہنا تھا کہ ملک کے کسان اور تاجر بھی پریشان ہیں۔ پاکستان میں بیروزگاری مسلسل بڑھ رہی ہے۔ حکومت ملک کیلئے اقتصادی خطرہ بن چکی ہے۔ موجودہ حکومت کو مستعفی ہو جانا چاہیے۔ عمران خان بھی طاہر القادری کی طرح سیاست چھوڑنے کا آبرومندانہ فیصلہ کریں۔
احسن اقبال نے کہا کہ نواز شریف کی ہدایت پر شہباز شریف نے مولانا فضل الرحمان سے ملاقات کی۔ دونوں رہنماؤں نے آزادی مارچ پر مشاورت کرتے ہوئے جھوٹے مقدمات میں گرفتاریوں کی شدید مذمت کی۔ شہباز شریف نے آزادی مارچ کیساتھ مکمل اتفاق کیا ہے۔انہوں نے بتایا کہ 30 ستمبر کو (ن) لیگ سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس ہوگا جس کے بعد اس کی سفارشات نواز شریف کو پیش کی جائیں گی۔ سفارشات کے بعد آزادی مارچ کا اعلان کیا جائے گا۔ ہم سیاسی اسیران کو رہا کرنے کا مطالبہ کرتے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *