کراچی میں دوسرے دن بھی بارش، انتظامی نااہلی سے شہریوں کی زندگی اجیرن

کراچی: (پاکستان فوکس آن لائن)کراچی میں صبح سے وقفے وقفے سے ہلکی اور تیز بارش کا سلسلہ جاری ہے جو جمعے کی شام تک جاری رہنے کا امکان ہے۔بدھ کی سہہ پہر ہونے والی بارش وقفے وقفے سے برستی رہی، رات میں ہونے والی بارش تیز ہواؤں اور بجلی کی کڑکڑاہٹ کے ساتھ ہوئی، تیز ہواؤں سے کئی علاقوں میں درخت بھی گرگئے۔ کورنگی مہران ٹاؤن میں دیوار گرنے سے ایک شخص جاں بحق ہوگیا۔
تفصیلات کے مطابق شہر قائد میں دوسرے دن بھی وقفے وقفے سے کہیں ہلکی کہیں تیز بارش کا سلسلہ جاری ہے جب کہ انتظامیہ کی نااہلی سے شہریوں کی زندگی اجیرن ہوگئی ہے۔محکمہ موسمیات کے مطابق گزشتہ روز سے اب تک سب سے زیادہ بارش نارتھ کراچی میں 55 ملی میٹر ریکارڈ کی گئی۔ اس کے علاوہ کراچی کے علاقے صدر میں 42، جناح ٹرمینل میں 41.8، یونیورسٹی روڈ 38 اور کیماڑی میں 32.2 ملی میٹر بارش ریکارڈ ہوئی۔ جب کہ سب سے کم بارش مسرور بیس پر صرف 2 ملی میٹر ریکارڈ کی گئی۔
گزشتہ روز ہونے والی بارش کے باعث سڑکیں ندی نالوں کا منظر پیش کررہی ہیں جب کہ نشیبی علاقے زیر آب آگئے ہیں۔ شہر کی مختلف شاہراہوں کے نشیبی مقامات پر بارش کا پانی جمع ہے، اس کے علاوہ یونیورسٹی روڈ، راشد منہاس روڈ، کورنگی روڈ، شہیدِ ملت ایکسپریس وے سمیت دیگر شاہراہیں متاثر ہیں۔ جبکہ گزشتہ روز ہونے والی بارش کے باعث قیوم آباد چورنگی، نیپا، فور کے چورنگی پر برساتی پانی کے باعث ٹریفک کی روانی متاثر ہے۔
شہر کے مختلف علاقوں میں گزشتہ رات سے بجلی بند ہے جب کہ ترجمان کے الیکٹرک کا کہنا ہے کہ بارش کے باعث متاثر ہونے والے علاقوں میں بجلی بحال کردی گئی ہے، چند مقامات پر پانی جمع ہونے کے باعث مرمتی کام میں تاخیر پیش آئی۔
مون سون بارشوں کے تیسرے اسپیل نے ایک بار پھر شہریوں کو مشکلات سے دوچار کردیا ہے، ہلکی بارش نے کئی علاقوں میں تباہی مچادی ہے، بلدیہ وسطی کی انتظامیہ نے اپنے دعوؤں کے برعکس تاحال ضلع کے اندرونی برساتی نالوں کی صفائی کاکام انجام نہیں دیا، جس کے باعث بارش کے دوران نارتھ کراچی یوپی نالہ اور شادمان نالہ ابل پڑا جس کی وجہ سے ناگن چورنگی، سیکٹر 11ایچ، 11-E،11-Cاور شادمان کے علاقے زیر آب آگئے۔ جبکہ ناگن چورنگی سے لے کر یوپی موڑ تک 5000 روڈ پر 3 فٹ پانی جمع ہوگیا ہے جس کی وجہ سے ایک طرف بارش اور سیوریج کے گندے پانی نے علاقہ مکینوں کو مشکلات سے دوچار کردیا ہے تو دوسری طرف ناگن چورنگی سے یوپی تک 3 فٹ پانی میں ڈوبی 5000روڈ پر ٹریفک کی روانی بھی شدید متاثر ہوگئی ہے۔ بارش نے ایک بار پھر سندھ حکومت کے حکام اور عملے کی نااہلی کا پول کھول کر رکھ دیا۔
دوسری جانب آل سندھ پرائیوٹ اسکولز ایسوسی ایشن نے بارش کی وجہ سے آج جمعرات تمام نجی اسکولز بند رکھنے کا اعلان کردیا۔آل سندھ پرائیوٹ اسکولز ایسوسی ایشن کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ شہر کے تمام نجی اسکولز جمعرات کو بند رہیں گے۔ایسوسی ایشن کے مطابق اسکولز بند رکھنے کا فیصلہ شہر میں تیز بارش کے باعث کیا گیا۔سرکاری تعلیمی اداروں کے حوالے سے حکومت کی جانب سے کوئی اعلان نہیں کیا گیا۔

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *