جے یو آئی کے آزادی مارچ میں افغان طالبان کے جھنڈے لہرا دیے گئے

نجی ٹی وی چینل نے دعویٰ کیا ہے کہ جے یو آئی کے آزادی مارچ میں طالبا ن عنصر کو فائدہ پہچانے کیلئے غیر ملکی جھنڈوں کا استعمال کر رہی ہے۔
نجی ٹی وی چینل اے آر وائے کے مطابق جے یو آئی اور طالبا ن کاگٹھ جوڑ سامنے آ گیا ہے،جے یو آئی اپنے مارچ میں متحدہ عرب امارات اور افغانستان کا جھنڈا استعمال کر رہی ہے،مارچ میں شریک افراد کے اس اقدام سے طالبان کے نظریے کو فروغ مل رہا ہے، شرکاءکا یہ عمل قومی سلامتی کیلئے بڑا خطرہ ہے۔
بھارتی میڈیا کیلئے کام کرنےوا لے صحافی انس ملک نے اپنے ٹوئٹر پیغام میں کہا کہ اسلامک امارات کا سپوٹر ساجد اللہ جے یو آئی (ایف) کے جلسے میں شریک ہے،اسلامک امارات کے جھنڈے کی موجودگی سے یہ بات عیاں ہے کہ طالبا ن کی بڑی تعداد بھی دھرنے میں موجود ہو سکتی ہے۔
میڈیا رپورٹس کے مطابق آزادی مارچ کے پنڈال میں دیگر سیاسی جماعت کے علاوہ سفید پرچم بھی لہرایا گیا جس پر کلمہ طیبہ لکھا ہوا تھا۔پرچم دو افراد نے تھام رکھا ہے جن کی شناخت کے بارے میں کوئی معلومات حاصل نہیں ہو سکیں اور نہ انتظامیہ نے طالبان کا پرچم لہرانے والوں کو روکا۔
واضح رہے کہ ایف اے ٹی ایف کا پاکستانی معیشت دباو تاحال برقرار ہے جبکہ گزشتہ دودہائیوں میں پاکستان نے دہشتگردی کیخلاف بے انتہا قربانیاں دی ہیں ، پاکس فوج نے ٹی ٹی پی کے خلاف بڑی جدودجہد کی تھی ،لیکن ان جھنڈوں کی نمائش پر کیا اثرات مرتب ہونگے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *