پی آئی اے کا طیارہ خوفناک حادثے سے بال بال بچ گیا

مانچسٹر: (پاکستان فوکس آن لائن)مانچسٹر ایئرپورٹ کے رن وے پر غلطی سے پاکستان ایئرلائنز (پی آئی اے) کے طیارے کا دروازہ کھولنے والے ایک درجن سے زائد مسافروں کو طیارے سے آف لوڈ کردیا گیا۔ رپورٹ کے مطابق قومی ایئرلائن کے ترجمان نے بتایا کہ مسافروں نے غلطی سے طیارے کا ہنگامی صورت میں استعمال کیے جانے والا دروازہ کھول دیا تھا۔تفصیلات کے مطابق پی آئی اے کا طیارہ خوفناک حادثے سے اس وقت بال بال بچ گیا جب ایک خاتون مسافر نے مانچسٹر ائیرپورٹ پر کھڑے طیارے کا ہنگامی حالت میں استعمال ہونے والا دروازہ کھول دیا۔مانچسٹر ائیر پورٹ پر پی آئی اے کا بوئنگ 777 طیارہ رن وے پر کھڑا ہوا تھا کہ طیارے میں موجود مسافر خاتون نے ہنگامی حالت میں استعمال ہونے والا دروازہ باتھ روم کا دروازہ سمجھ کر کھول دیا۔ دروازہ کھلتے ہی طیارے کا شوٹ کھل گیا جس کے نتیجے میں خاتون مسافر طیارے سے باہر گرنے سے بال بال بچ گئیں۔
پی آئی اے کے ترجمان نے واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ یہ حادثہ پی کے 702 کی فلائٹ پر پیش آیا۔ذرائع کے مطابق اگر ہنگامی حالت میں استعمال ہونے والا دروازہ دوران پرواز کھل جاتا تو طیارے میں موجود 37 مسافروں کی زندگی خطرے میں پڑ سکتی تھی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ یہ واقعہ عملے کی کمی کی وجہ سے پیش آیا، طیارے پر 16 کی بجائے 10 رکنی عملہ ڈیوٹی کر رہا تھا کیونکہ پی آئی اے انتظامیہ نےکم کیبن کریو کے ساتھ پرواز آپریٹ کرنے کی پالیسی اختیار کر رکھی ہے۔ذرائع ائیر لائن کا کہنا ہے کہ کیبن کریو کی مطلوبہ تعداد کم از کم کرنےکے بعد فلائٹ آپریٹ کرنے کی وجہ سے حفاظتی معیار پر سمجھوتہ ہو رہا ہے۔پی آئی اے کا طیارہ اسلام آباد سے مانچسٹر پہنچا تھا اور حادثے کے بعد طیارہ سیکیورٹی کلیئرنس ملنے کے بعد 7 گھنٹے کی تاخیر سے روانہ ہوا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *