عالمی منڈی میں تیل کی قیمت 30 فیصد تک کم ہوگئی

تیل کی قیمتیں 29 سال کی کم ترین سطح پر،دنیا بھر کی اسٹاک مارکیٹیں بیٹھ گئیں

واشنگٹن: (پاکستان فوکس آن لائن) عالمی منڈی میں تیل کی قیمتیں 29 سال کی کم ترین سطح پر آگئیں، عالمی منڈی میں 26 فیصد تک ریکارڈ کمی ہوئی، دنیا بھر کی سٹاک مارکیٹیں بیٹھ گئیں۔ عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمتیں 1991 کی خلیجی جنگ کے بعد 29 سال کی کم ترین سطح پر آگئیں، امریکی خام تیل کی قیمت 31 فیصد کمی کے بعد 28 ڈالر 56 سینٹ فی بیرل پر آگئی۔
برطانوی خام تیل 29 فیصد کمی کے بعد 32 ڈالر اکیس سینٹ فی بیرل پر فروخت ہو رہا ہے۔ اوپیک اجلاس میں روس نے تیل کی یومیہ پیداوار میں کمی سے انکار کر دیا تھا۔ سعودی عرب نے تیل کی قیمتیں نیچے گرائیں جس کے بعد عالمی منڈی میں قیمتوں میں بڑی کمی آئی ہے۔عرب میڈیا کے مطابق عالمی منڈی میں تیل کی قیمت میں 20 فیصد تک کم ہوگئی ۔ سعودی عرب کی جانب سے تیل کی قیمتیں اپریل تک کےلئے فی بیرل 6سے 7 ڈالر کم کرنے کے اعلان کیا گیا ۔ سعودی عرب کی جانب سے ایشیا، یورپ اور امریکا کے لیے تیل کی فی بیرل قیمت 6 سے 7 ڈالر گھٹانے کے بعد کم ہوئیں۔ ویسٹ ٹیکساس کے سودے 32 اور برینٹ 36 ڈالر فی بیرل پر فروخت ہوئے۔کورونا وائرس کے پیش نظر روس اور اوپیک کے درمیان تیل کی پیداوار گھٹانے پر اتفاق نہیں ہو سکا تھا جس کے بعد سعودی عرب نے تیل کی قیمت کم کرنے کا اعلان کیا تھا۔
ادھر ایشیائی اسٹاک مارکیٹ میں شدید مندی کا رحجان رہا، جاپان اسٹاک مارکیٹ میں 7 فیصد کی کمی ہوئی، تھائی لینڈ اسٹاک مارکیٹ 6 فیصد، جنوبی کوریا اسٹاک مارکیٹ 4 فیصد، چینی اسٹاک مارکیٹ 3 فیصد تک گر گئی، ہانگ کانگ اسٹاک مارکیٹ میں ساڑھے 3 فیصد، بھارت 3 فیصد، سنگا پور 4 فیصد، بنگلہ دیش اسٹاک مارکیٹ میں 2.2 فیصد کمی ہوئی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *