غلط انجکشن سے مفلوج ہونے والی بچی نشوا انتقال کرگئی

کراچی: (پاکستان فوکس آن لائن) کراچی کے دارالصحت ہسپتال میں غلط انجکشن لگنے سے متاثر ہونے والی بچی نشوا آج خالق حقیقی سے جا ملی، 16 روز قبل معصوم کو ڈائریا کے باعث دارلصحت ہسپتال لے جایا گیا تھا۔ 6 اپریل کو نشوا اور اسکی بہن کو ڈائریا کے باعث گلستان جوہر کے دارالصحت ہسپتال لے جایا گیا تھا۔ بہن کو طبی امداد دینے کے بعد 7 اپریل کو گھر منتقل کر دیا گیا تھا تاہم نشوا کو عملے نے غلط انجکشن لگایا، بچی کی طبعیت ایسی بگڑی کہ دماغ کا ذیادہ حصہ مفلوج ہو گیا اور ہاتھ پاوں ٹیڑھے ہونے لگے جس کے بعد اسے لیاقت نیشنل ہسپتال منتقل کیا گیا وہ ہسپتال کے انتہائی نگہداشت یونٹ میں زیر علاج تھی۔ترجمان لیاقت نیشنل ہسپتال انجم رضوی کا کہنا ہے کہ آج صبح بچی کی طبیعت بہت خراب تھی، معصوم کا دماغ بری طرح متاثر تھا۔ انہوں نے کہا حکومت سندھ نے کہا تھا بچی کا بیرون ملک علاج کرائیں گے تاہم ہسپتال انتظامیہ کو ایسے کوئی احکامات نہیں ملے، ہسپتال میں فٹس کے نیورولوجسٹ نشوا کا علاج کر رہے تھے۔نشوا کے والدین غم سے نڈھال ہیں، والدہ گود میں بچی کی میت لیکر گھر میں داخل ہوئیں۔ ادھر وزیراعلی سندھ نے بچی کی موت پر افسوس کا اظہار کیا اور کہا سندھ حکومت نے نشوا کے بیرون ملک علاج کروانے کا پلان بنایا تھا، نشوا کے والدین کے ساتھ انصاف ہوگا، نشوا کیلئے اسپیشل بورڈ بھی تشکیل دیا گیا تھا۔

اپنی بچی کے قاتلوں کو معاف نہیں کروں گا، والد نشویٰ

نشویٰ کے والد قیصر علی کا کہنا ہے کہ وہ اپنی بچی کے قاتلوں کو معاف نہیں کریں گے۔مرحوم نشوا کی میت اسپتال سے گھر لانے کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے قیصر علی نے کہا کہ اسپتالوں میں غفلت نہ برتی جائے، اپنی بچی کے قاتلوں کو معاف نہیں کروں گا۔غم سے نڈھال والد نے کہا کہ سیاسی لوگ آتے رہیں گے پر اس غفلت پر کارروائی ہونی چاہیے۔ یاد رہے کہ 9 ماہ کی نشویٰ کو 6 اپریل کو گلستان جوہر کے نجی اسپتال میں داخل کیا گیا جہاں غلط انجکشن لگنے سے وہ دماغی طور پر مفلوج ہوگئی تھی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *