کسی کواین آراو نہیں دوں گا،نوازشریف،زرداری پیسہ واپس کرکے باہر چلے جائیں،وزیراعظم

اسلام آباد: (مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم عمران خان کاکہنا ہے کہ کسی کواین آراو نہیں دوں گا این آر او تو ہونا نہیں ہے پلی بارگین ہوسکتی ہے۔ نوازشریف اور زرداری پیسہ واپس کردیںاورملک سے باہر چلے جائیں۔ شریف خاندان نے این آر او کیلئے دو ممالک کو پیغام بھجوائے۔ دونوں ممالک مجھے اچھی طرح جانتے ہیں وہ ذرا بھی دبائو نہیں ڈالیں گے۔ امریکا میں اپنے سفارتخانے میں رہوں گا۔ قوم کا پیسہ بچائوں گا۔ میرے خیال میں معیشت درست سمت کی طرف گامزن ہے عالمی مالیاتی ادارے کے ساتھ تین جولائی کومیٹنگ ہے جس کے بعد افراتفری ختم ہوجائے گی۔ ماضی کے تمام حکمران منی لانڈرنگ میںملوث ہیں۔ نجی ٹی وی کوانٹرویو کے دوران وزیراعظم کا کہنا تھا کہ شریف خاندان کے دوبیٹوں نے دوممالک کو مسیج بجھوائے،شریف خاندان کے بیٹوں نے مسیج بھجوایا کہ کسی طرح باہربجھوادیں۔ دونوں ممالک مجھے اچھی طرح جانتے ہیں کہ میں دبائو میں نہیں آئوں گا۔کلیئرکرنا چاہتاہوں کہ کسی کی بھی این آر او کی سفارش نہیں چلے گی۔ عدالتی اصلاحات جاری ہیں،پنجاب پولیس میں مسائل آرہے ہیں۔ وقت بتائے گا کہ مریم نواز کا کیا سیاسی مستقبل ہے۔ مجھ سے رابطے میں بہت لوگ ہیں ۔ کسی کوچھانگا مانگا جیسی سہولتیں نہیں دی ہیں۔ ہم چیئرمین سینیٹ کی مکمل سپورٹ کریں گے۔ کرپشن کرنے والوں سے عام قیدیوں جیسا سلوک ہونا چاہیے اپوزیشن نے جو باتیں کی ان کو شرم سے ڈوب جانا چاہیے۔ عمران خان کا کہنا تھا کہ ملک کوقرضوں کی دلدل سے نکالنے کیلئے زرعی اورصنعتی شعبے کو بھی فروغ دیا جائے گا۔ اسمگل شدہ اشیا کی درآمد اورخریدوفروخت کی یکسرروک تھام کی جائے گی۔ ملکی کارپوریشنز میں بھی اصلاحات ناگزیر ہیں، اب آئی ایم ایف پروگرام ہوگا تومعیشت مضبوط ہوگی سیاست دانوں کی بے نامی جائیدادوں پر ایکشن ہونے والا ہے،سیاست دانوں کی بے نامی جائیدادیں کل سے ضبط ہونا شروع ہوں گی، خانسامے،ڈرائیور کے نام پر آنے والا پیسہ بے نامی ہے، ضبط ہوجائے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم لوگوں کوبتارہے ہیں کہ ہمیں کیسی معیشت ملی اورہم کیاکررہے ہیں،ڈالر کیوں بڑھا اس کی وجہ جاننے کی ضرورت ہے، حکومت کو ملک کا سب سے بڑا خسارہ ملا۔ ساڑھے19ارب ڈالر کاخسارہ بڑھتا ہے۔ ہرسال منی لانڈرنگ کے ذریعے ملک سے 10ارب ڈالر کاپیسہ بیرون ملک جاتاہے۔ شہبازشریف کے بیٹوں نے ٹی ٹی کے ذریعے منی لانڈرنگ کی۔ سابق حکمران منی لانڈرنگ میں ملوث رہے اس کی بڑی مثال ایان علی ہے جوپانچ لاکھ ڈالر لیکردبئی جارہی تھی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *