دپیکا پڈوکون بھی بھارتی انتہاپسندوں کے خلاف کھڑی ہوگئیں

بالی وڈ سپر اسٹار دپیکا پڈوکون بھی بھارتی انتہاپسندوں کے خلاف کھڑی ہوگئیں اور نئی دہلی کی جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو) میں ہندو انتہا پسند تنظیم راشٹریہ سویم سیوک سنگھ( آر ایس ایس) کے حملے کے خلاف احتجاج میں جاپہنچیں۔
خیال رہے کہ نئی دہلی کی جواہر لال نہرو یونیورسٹی میں گزشتہ اتوار کو آر ایس ایس کے نقاب پوش مسلح کارکنوں نے حملہ کرکے خاتون پروفیسر اور متعدد طلبہ و طالبات کو تشدد کا نشانہ بنایا تھا جس کے باعث اساتذہ اور یونیورسٹی اسٹوڈنٹس یونین کی صدر سمیت 20 سے زائد طلبہ و طالبات زخمی ہوگئے تھے۔حملے کے خلاف جے این یو سمیت بھارت کے مختلف علاقوں میں احتجاج کیا جارہا ہے جب کہ مودی سرکار نے الٹا جے این یو اسٹوڈنٹس یونین کی صدر سمیت 19 طلبہ کے خلاف سیکیورٹی گارڈ پر تشدد کا مقدمہ درج کرلیا ہے۔بھارتی میڈیا کے مطابق دپیکا پڈوکون آر ایس ایس کی غنڈہ گردی سے زخمی ہونے والوں سے اظہار یکجہتی کے طور پر جے این یو میں ہونے والے احتجاج میں شرکت کے لیے پہنچیں اور ہندو انتہاپسندی کے خلاف مظاہرے میں طلبہ کے ساتھ کھڑی رہیں۔اب تک سونم کپور، سوارا بھاسکر، دیا مرزا، عالیہ بھٹ اور رچا جڈا جیسی اداکارائیں اس حملے کے خلاف آواز اٹھا چکی ہیں اور اب دپیکا پڈوکون بھی خود طلبہ کے ساتھ ان کے احتجاج کا حصہ بن گئیں۔
دوسری جانب بھارت کے مختلف شہروں میں واقعے کے خلاف احتجاج کیا جارہا ہے۔ممبئی کے گیٹ وے آف انڈیا پر گذشتہ 2 دن سے مظاہرہ کرنے والوں کو پولیس نے زبردستی ہٹادیا اور پولیس اہلکار مظاہرین کو گھسیٹتے ہوئے بسوں میں لے کرگئے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *