پابندی کے باوجودراہول گاندھی سمیت دیگرسیاستدان مقبوضہ کشمیر روانہ

نئی دہلی: (پاکستان فوکس آن لائن)مقبوضہ کشمیر میں مودی حکومت کی جانب سے عائد پابندیوں اور وادی میں نافذ کرفیو کے خلاف آواز اٹھانے کے لیے کانگریس رہنما راہول گاندھی لوک سبھا میں اپوزیشن جماعتوں کے رہنماؤں کے ہمراہ سری نگر کے لیے روانہ ہوگئے۔
تفصیلات کے مطابق کانگریس رہنما راہول گاندھی اور غلام نبی آزاد سمیت 12 سیاست دان مقبوضہ کشمیر کے لیے روانہ ہوگئے ہیں۔میڈیا رپورٹس کے مطابق کانگرس رہنماؤں کا کہنا ہے کہ وہ سری نگر میں زیر حراست سیاسی رہنماؤں سے ملنے اور جموں کشمیر کے عوام سے اظہار یکجہتی کے لیے وہاں جا رہے ہیں۔غلام نبی آزاد نے روانگی سے پہلے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ہم کسی قانون کو توڑنے نہیں جا رہے، 20 دن سے کشمیر کی کوئی خبر نہیں۔انہوں نے سوال کیا کہ مودی سرکار کا کہنا ہے کہ وادی میں سب ٹھیک ہے تو پھر کشمیر میں جانے کیوں نہیں دیا جا رہا؟
ان کا مزید کہنا تھا کہ کسی کو مقبوضہ وادی میں داخلے کی اجازت نہیں کچھ تو ہے جو بی جے پی چھپا رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ اگر حالات ٹھیک ہیں تو عمر عبدللہ اور محبوبہ مفتی نظر بند کیوں ہیں؟مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کے کرفیو کا آج 20واں روز ہے مگر حالات ہر گزرتے دن کے ساتھ مزید خراب ہو رہے ہیں۔

این ڈی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق مقبوضہ جموں و کشمیر کے شعبہ اطلاعات کی جانب سے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پیغام جاری کیا گیا جس میں راہول گاندھی کو خبردار کیا گیا کہ ‘وہ سری نگر کا دورہ نہ کریں، اس وقت وہ دوسروں کو بھی مشکلات میں ڈال سکتے ہیں۔‘

بھارتی اخبار ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق کانگریس رہنما طیارے کے ذریعے سری نگر کے لیے روانہ ہو گئے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *