سعودی عرب میں لاک ڈاؤن،ریاض، مکہ اور مدینہ آنے جانے پر مکمل پابندی عائد

کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے سعودی حکام نے دارالحکومت ریاض، مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ آنے جانے پر مکمل پابندی لگادی ہے۔عرب نیوز کے مطابق سعودی فرمانروا خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبد العزیز نے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے مملکت میں جاری کرفیو میں مزید سختی کا اعلان کیا ہے۔سعودی عرب کے سرکاری خبر رساں ادارے کے مطابق شاہ سلمان بن عبد العزیز نے شاہی فرمان جاری کرتے ہوئے نئے اقدامات کی منظوری دی ہے۔
شاہی فرمان کے تحت مملکت کے تمام 13 ریجنوں(صوبوں) کے رہائشی ایک ریجن سے دوسرے ریجن میں نہیں جاسکیں گے جب کہ تین سعودی شہروں دارلحکومت ریاض اور حرمین شریفین مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ کے لیے خصوصی ہدایات جاری کی گئی ہیں۔ان تین شہروں کے رہائشی شہر سے باہر نہیں آسکیں گے اور نا ہی ریجن کے رہائشی ان شہروں میں جاسکیں گے۔
اس کے علاوہ ان تین شہروں میں کرفیو کا وقت بھی بڑھاکر دوپہر 3 بجے سے صبح 6 بجے تک کردیا گیا ہے ، اس سے قبل یہ وقت شام 7 بجے سے شروع ہوتا تھا۔حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ باقی ریجن کے گورنر اور حکام چاہیں تو اپنی صوابدید پر کرفیو کا وقت بڑھا سکتے ہیں۔نئے حکم نامے کا اطلاق جمعرات کو 3 بجے سے شروع ہو کر سابقہ فرمان میں مقرر کیے گئے وقت تک جاری رہے گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *