کراچی میں آن لائن ٹرانسپورٹ اوربسیں چلانےکی اجازت دیدی گئی

اضافی مسافر نہیں بٹھائے جائینگے، ٹرانسپورٹرز کو ایس او پیز پر عمل کرنا پڑے گا، وزیرٹرانسپورٹ

کراچی: (پاکستان فوکس آن لائن)سندھ میں وزیر ٹرانسپورٹ اور ٹرانسپورٹرز کے درمیان مزاکرات کامیاب ہوگئے، سندھ حکومت نے اندرون شہر چلنے والی ٹرانسپورٹ کھولنے کی اجازت دیدی۔ ٹرانسپورٹرز ایس او پیز کے تحت بسیں چلائیں گے۔تفصیلات کے مطابق شہرمیں آن لائن ٹرانسپورٹ بھی چلانے کی مشروط اجازت دے دی گئی ہے۔وزیرٹرانسپورٹ اویس شاہ اور ٹرانسپورٹرز کے درمیان مذاکرات کامیاب ہوگئے جس کے بعد سندھ حکومت نے اندرون شہر ٹرانسپورٹ کھولنے کی اجازت دی۔اویس شاہ نے مذاکرات کامیاب ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ کراچی شہر کے اندر کل سے ٹرانسپورٹ چلانے کی اجازت دے دی ہے۔وزیر ٹرانسپورٹ کا کہنا تھا کہ گاڑیوں میں اضافی مسافر نہیں بٹھائے جائیں گے، تمام ٹرانسپورٹرز کو ایس او پیز پر عمل کرنا پڑے گا، اگر عمل نہ کیا گیا تو گاڑیاں بند کردی جائیں گی۔انہوں نے کہا کہ جس گاڑی میں ماسک اور سینیٹائزر نہیں ہوگا اس کے خلاف کارروائی ہوگی، منظور شدہ اڈوں سے گاڑیاں نکلیں گیں اور خلاف ورزی پر کارروائی ہوگی، ٹرانسپورٹ سے متعلق آج رات تک نوٹیفکیشن جاری کردیں گے۔وزیرٹرانسپورٹ نے ایس اوپیزپر عملدرآمدکے لیے مانیٹرنگ اور انسپیکشن ٹیم بھی تشکیل دی ہے جس میں ٹرانسپورٹ اور ریونیو کے افسران شامل ہوں گے۔
صوبائی وزیرٹرانسپورٹ نے یہ بھی بتایا کہ کراچی میں آن لائن ٹرانسپورٹ سروسز کو بھی بحال کرنے کی اجازت دے دی گئی ہے۔ آن لائن ٹیکسی سروس میں صرف 2 افراد کوبیٹھنے کی اجازت ہوگی، ہنگامی صورتحال میں ٹیکسی میں مزید ایک شخص کو ساتھ بٹھایاجاسکے گا۔اویس قادر شاہ کے مطابق آن لائن بس سروس کو سیٹ بائے سیٹ سروس چلانےکی اجازت ہوگی،بس میں ایئرکنڈیشن چلانے کی اجازت نہیں ہوگی،جو ٹرانسپورٹر اے سی چلائےگا، وہ ایک سیٹ پرایک مسافر بٹھائےگا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *