ڈوریان: انسانی تاریخ میں خشکی سے ٹکرانے والا سب سے طاقتور طوفان قرار

نارتھ کیرولینا: (پاکستان فوکس آن لائن)اس وقت دنیا بھر میں بہاماس جزائر سے فلوریڈا کا رخ کرنے والے سمندری طوفان (ہری کین) ڈوریان کا تذکرہ ہورہا ہے جسے اب تک کی اطلاعات کے مطابق خشکی سے ٹکرانے والا انسانی تاریخ کا سب سے طاقتور طوفان قرار دیا جارہا ہے۔گلوبل وارمنگ کی وجہ سے یہ قدرے گرم پانیوں سے گزرتا ہوا امریکی ساحلوں سے ٹکرانے کے لیے تیار ہے اور اسے 1935 بحرِ اوقیانوس (ایٹلانٹک) میں رونما ہونے والے ہولناک طوفان سے تشبیہ دی جارہی ہے۔
اس طوفان کو پانچویں درجے (کیٹگری فائیو) میں شامل کیا گیا ہے۔ اتوار کو یہ اس نے بہاماس کے پاس اباکو جزائر اور دیگر علاقوں کو پانی کی بوچھاڑ سے ہلاکر رکھدیا ۔ اس وقت ہواؤں کی رفتار 300 کلومیٹر چل رہی تھی اور بسا اوقات 350 کلومیٹر فی گھنٹے کے جھکڑ بھی نوٹ کئے گئے۔ اس طرح بہاماس سے ٹکرانے والا یہ طاقتور ترین طوفان قرار پایا ہے۔
بہاماس میں آنے والے انتہائی خطرناک سمندری طوفان ’ڈوریان‘ سے تباہ کاریاں جارہی ہیں جب کہ سیلابی پانی میں بہہ کر اب تک 5 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق پیر کے روز سے سمندری طوفان ڈوریان نے بہاماس کو اپنی لپیٹ میں لے رکھا ہے جب کہ سمندری طوفان سے متعدد گھر سیلابی پانی میں بہہ گئے اور مختلف واقعات میں 5 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔میڈیا رپورٹس کے مطابق طوفان کے امریکی ساحل کی جانب بڑھنے کے پیش نظر لاکھوں افراد کو نقل مکانی کی ہدایات جاری کردی گئی ہیں جب کہ حکام نے شہریوں کو طوفانی ہواؤں کے باعث محفوظ پناہ گاہوں میں رہنے کی بھی ہدایت کی ہے۔بہاماس کے وزیراعظم ہوبرٹ میننس نے شمالی آئس لینڈ میں 5 افراد کی ہلاکت کی تصدیق کرتے ہوئے کہاکہ ہم شمالی بہاماس میں تاریخی المیے کے درمیان ہیں، اس وقت ہمارا مشن اور توجہ تلاش، ریسکیو اور بحالی ہے۔انہوں نے بتایا کہ جزیرے اباکو میں امریکی کوسٹ گارڈ کے اہلکار ریسکیو کارروائیوں میں مصروف ہیں اور انہوں نے اب تک متعدد زخمیوں کو طبی امداد کے لیے اسپتالوں میں منتقل کیا ہے جن میں شدید زخمی بھی شامل ہیں۔میڈیا رپورٹس کے مطابق جزیرے اباکو میں موجود عینی شاہدین کا بتانا ہےکہ طوفانی ہواؤں سے گھروں کی کھڑکیاں اور چھتیں اڑگئیں جب کہ تمام علاقہ جھیل کی صورت اختیار کرچکا ہے۔ریسکیو حکام کے مطابق ڈوریان طوفان سے گرینڈ بہاماس آئس لینڈ پر 12 سے 18 فٹ تک کی لہریں اٹھنے کا خطرہ ہے جب کہ طوفان کے نتیجے میں 13 ہزار گھروں کو شدید نقصان پہنچا ہے۔حکام نے مزید بتایا کہ طوفان کے شمال مغرب کی جانب بہاؤ کا اندیشہ ہے جس کے باعث یہ امریکی ریاست فلوریڈا، جنوبی کیرولینا اور جارجیا کے ساحلوں کو متاثر کرسکتاہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *