ناروے میں قرآن پاک کو جلانے کا واقعہ، ایک نوجوان نے اسلام قبول کر لیا

فیصلہ واقعے پر مسلمانوں کے ردعمل دیکھنے کے نتیجے میں کیا، کلمہ پڑھتے ہی جذبات پر قابو رکھنا مشکل ہو گیا

اوسلو: (پاکستان فوکس آن لائن)ناروے میں قرآن جلانے کے واقعے پر مسلمانوں کے ردعمل سے متاثر ہو کر نارویجن نوجوان نے اسلام قبول کر لیا۔ کلمہ پڑھتے ہی جذبات پر قابو رکھنا مشکل، رونے لگے۔فیصلہ واقعے پر مسلمانوں کے ردعمل دیکھنے کے نتیجے میں کیا، کلمہ پڑھتے ہی جذبات پر قابو رکھنا مشکل ہو گیا۔ تفصیلات کے مطابق ناووے میں قرآن پاک جلانے کے واقعے نے جہاں پوری دنیا کے مسلمانوں کے دل میں ایک بہت بڑی چھاپ چھوڑ دی تھی وہاں کے اسکے ردعمل کو دیکھتے ہوئے غیر مسلم بھی متاثر ہوئے بغیر نہ رہ سکے۔
مسلمانوں کے شدید ردعمل ہو دیکھتے ہوئے ایک نوجوان نے کلمہ طیبہ پڑھا اور مسلمان ہو گیا، کلمہ پڑھتے ہی اپنے جذبات پر قابو نہ پا سکا اور رونے لگا۔ اس حوالے سے اسکی ویڈیو نے تمام مسلمانوں نے اندرخوشی کی فضاء کو جنم دیا جس نے انکے جذبہ ایمان کو کھوب جھنجھوڑا۔
مذکورہ ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ایک شخص اس نوجوان کو کلمہ پڑھا رہا ہے اور کلمہ پڑھتے ہی جیسے ہی سب لوگ اس شخص کو مبارکباد دینے کے لیے اٹھے وہ زاروقطار رونے لگا۔
واضع رہے کہ ناروے میں انتہائی افسوس ناک واقعہ پیش آیا تھا۔ وہاں پر موجود ایک مسلم مخالف گروہ نے ایک ریلی نکالی اور اس میں قرآن پاک کو نزرآتش کرنے کی کوشش کی۔ جیسے ہی ریلی میں موجود ایک شخص نے قرآن مجید کو آگ لگائی ایک شخص فوراً ہجوم سے نکلا اور اس شخص کو ایک لات ماری جسکے بعد وہ زمین پر جا گرا۔ اس شخص نے قرآن پاک کو اپنے ہاتھوں میں سنبھال لیا اور اسکی برحمتی ہونے نہ دی۔ اس حوالے سے مسلمانوں کا بہت شدید ردعمل سامنے آیا تھا۔ ساری دنیا کے مسلمان اس پر متحد ہوگئے تھے اور اس واقعے کے خلاف شدید احتجاج کیا تھا۔ اس واقعے نے ایک نومسلم پر بہت زیادہ اثر کیا اور وہ مسلمان ہو گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *