لندن پولیس کے دو اہلکاروں کا سیاہ فام شخص پر تشدد، ویڈیو وائرل

اہلکاروں نے ایسی تکنیک کا استعمال کیا جس کی انہیں تربیت نہیں دی جاتی،پولیس چیف

لندن: (پاکستان فوکس آن لائن) لندن پولیس کے دو اہلکاروں کا سیاہ فام پر تشدد کا واقع پیش آیا ہے۔ برطانوی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق شمالی لندن کے علاقے آئیلنگٹن میں جھگڑے پر پولیس طلب کی گئی تھی، وہاں پہنچنے والے پولیس اہلکاروں نے ملزم کے حلیے سے ملتے جلتے ایک سیاہ فام شخص کو پکڑ کر گرا دیا اور ایک پولیس اہلکار اس کی گردن پر گھٹنا بھی رکھ کر بیٹھ گیا۔اس واقعے کی ویڈیو مںطرعام پر آ گئی ہے جس میں اہلکاروں کو تشدد کرتے ہوئے دیکھا گیا ہے۔ اس بارے میں بات کرتے ہوئے پولیس چیف کا کہنا تھا کہ اہلکاروںنے ایسی تکنیک کا استعمال کیا جس کی انہیں تربیت نہیں دی جاتی۔ واقع پیش آنے کے بعد مقامی میڈیا کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ دونوں اہلکاروں میں سے ایک کو نوکری سے نکال دیا گیا ہے جبکہ دوسرے اہلکار کو وقتی طور پر ڈیوٹی کرنے سے روک دیا گیا ہے۔
واضح رہے کہ کچھ عرصے قبل امریکی ریاست منی سوٹا کے شہر مینی پولس میں 25 مئی 2020 کو سفید فام پولیس اہلکار کے ہاتھوں 45 سالہ سیاہ فام شہری جارج فلائیڈ ہلاک ہوگیا تھا۔مینی پولس میں سفید فام پولیس اہلکاروں کے ہاتھوں سیاہ فام جارج فلائیڈ کے قتل کے بعد ہنگامے پھوٹ پڑے تھے جس نے امریکا اور برطانیہ کے کئی شہروں کو اپنی لپیٹ میں لے لیا تھا۔بعدازاں فیس بک سمیت کئی کمپنیاں بھی سیاہ فام شہری کی ہلاکت پر ہونے والے احتجاج میں بھی شریک ہو گئیں اور پھر’’ بلیک لائیو میٹر‘‘کے ذریعے جارج فلائیڈ کیلئے انصاف اور سیاہ فاموں کے حقوق کا مطالبہ کیا گیا جس کا سلسلہ اب بھی جاری ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *