اسٹاک مارکیٹ میں شدید مندی کے سبب کاروبار روک دیا گیا

عالمی مندی کا خوف، 100 انڈیکس ایک ہزار348 پوائنٹس گر گیا

کراچی: (پاکستان فوکس آن لائن)کراچی سٹاک مارکیٹ میں شدید مندی ، ہنڈرڈ انڈیکس میں ایک ہی دن میں چار فیصد کمی ہوگئی ہے۔شدیدمندی کے باعث بازار حصص ایک ہی ہفتے میں دوسری بار منجمد ہوگئی اور کاروبار پینتالیس منٹ کیلئے روک دیا گیا۔دوران کاروبار ایک ہزار تین سو سے 48 پوائنٹس کی کمی ہوئی ہے اور مارکیٹ مسلسل ڈاون جارہی ہے۔ہنڈرڈ انڈیکس 34ہزار400سے بھی نیچے آگیا اور36,348.99پر ٹریڈ کررہاہے۔
اس حوالے سے بتایا جارہا ہے کہ عالمی ادارہ صحت کی جانب سے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو عالمگیر وبا قرار دینے اور امریکا کی جانب سے یورپ پر سفری پابندی عائد کرنے کے پیشِ نظر مقامی اسٹاک مارکٹ پر عالمی منڈیوں کی صورتحال کے اثرات ہیں۔
تفصیلات کے مطابق پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں کاروبار کے دوران ایک مرتبہ پھر منفی رجحان دیکھا گیا جبکہ ڈالر کی قیمت بھی بڑھ گئی۔جمعرات 12 مارچ کو اسٹاک مارکیٹ میں شدید مندی کے باعث 100 انڈیکس 37 ہزار کی سطح بھی برقرار نہ رکھ سکا۔کاروبار کے دوران 100 انڈیکس میں ایک ہزار تین سو سے 48 پوائنٹس کی کمی ہوئی ہے۔ گزشتہ روز مارکیٹ میں مثبت رجحان دیکھا گیا تھا جس کے بعد مارکیٹ 37 ہزار 673 پوائنٹس پر بند ہوئی تھی۔اسٹاک مارکیٹ میں منفی رجحان کے بعد انٹر بینک میں ڈالر 8 ماہ کی بلند سطح پر پہنچ گیا۔فاریکس ڈیلرز کے مطابق ڈالر 53 پیسے مہنگا ہونے سے 158.42 سے بڑھ کر 158.95 روپے پر پہنچ گیا۔ گزشتہ 4 روز میں انٹربینک میں ڈالر 4 روپے 71 پیسے مہنگا ہوا۔انٹربینک کے بعد اوپن مارکیٹ میں بھی ڈالر ایک روپے مہنگا ہوکر 8 ماہ بعد 159 روپے کا ہوگیا۔ چار روز میں اوپن مارکیٹ میں ڈالر 4 روپے 70 پیسے مہنگا ہوا۔
واضح رہے کہ کرونا وائرس کے باعث دنیا بھی کی اسٹاک مارکیٹیں گر چکی ہیں جبکہ عالمی منڈی میں تیل کی قیمتیں بھی 1991 کے بعد سے کم ترین سطح پر آگئی ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *