پہلے وزیر اعظم ’’میثاق معیشت‘ ‘پر اپنا موقف واضح کریں،پھر بات کرینگے،زرداری

اسلام آباد: (پاکستان فوکس آن لائن) سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ پہلے وزیر اعظم میثاق معیشت پر اپنا موقف واضح کریں پھر ہم اپنی پارٹی کا ردعمل اور سیاسی اتحادیوں کا موقف سامنے لائیں گے۔پارلیمنٹ ہاؤس اسلام آباد میں آمد کے موقع پر ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے گفتگو میں انکا کہنا تھا کہجب 8 سال 3 ماہ پہلے این آر او نہیں مانگا تو اب کیا مانگوں گا؟
پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنما اور قومی اسمبلی میں سابق قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ نے کہاہے کہ اب عمران خان خود میثاق معیشت کے لیے اپوزیشن سے رابطے کریں۔اسلام آباد میں ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ حکومت والے ایک طرف معیشت کی بات کرتے ہیں دوسری جانب این آر او کا الزام لگاتے ہیں،یہ حکومت کی منفی سوچ ہے۔خورشید شاہ نے کہا ہم نے اسپیکر سے جو بات کی اس کا نتیجہ یہ ملا کہ ہم این آر او مانگ رہے ہیں، انہوں نےحکومت کا نام لیے بغیر کہا ان سے کون بات کر سکتا ہے؟سید خورشید شاہ نے کہا ہم اب جب بھی ان سے بات کریں گے ایسا لگے گا ہم این آر او مانگ رہے ہیں۔ این آ ر او کی ضرورت ان کو پڑے گی۔سابق قائد حزب اختلاف قومی اسمبلی نے کہا کہ اپوزیشن کا بجٹ ووٹنگ میں حصہ نہ لینا منفی بات ہو گی،ایسا کرنا بلاواسطہ حکومت کو فری ہینڈ دینا ہو گا،ہم عمران خان کی ذات کے مخالف نہیں ہیں۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ سیاست دان کیوں ڈیل کرے ، سیاستدان ڈیل نہیں کرتے۔
واضح رہے کہ سید خورشید شاہ کا یہ بیان وزیراعظم عمران خان کی طرف سے حزب اختلاف کے ساتھ میثاق معیشت کی منظوری کی خبروں کے بعد سامنے آیاہے۔خیال رہے کہ گزشتہ روز وزیراعظم نےمیثاق معیشت کیلئے اعلی سطح کی پارلیمانی کمیٹی سے متعلق اسپیکرقومی اسمبلی سے مشاورت کی ہے، میثاق معیشت کمیٹی میں سینیٹ اور قومی اسمبلی میں موجود تمام سیاسی جماعتوں کے اراکین شامل کئے جانے کا امکان ہے۔ میثاق معیشت کمیٹی بنانے کا مقصد یہ ہے کہ اس کے ذریعے سیاسی جماعتوں کے اہم رہنما ملکی معیشت میں بہتری کے لئے تجاویز دے سکیں۔
اس موقع پر وزیراعظم نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت پارلیمنٹ میں جمہوری اور اخلاقی اقدار کی پاسداری پر یقین رکھتی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *