پرویزمشرف کے خلاف سنگین غداری کیس کا تفصیلی فیصلہ آتے ہی اسٹاک مارکیٹ کریش کر گئی

کراچی: (پاکستان فوکس آن لائن)خصوصی عدالت نے پرویز مشرف کے خلاف سنگین غداری کیس کا تفصیلی فیصلہ جاری کر دیاہے جس میں سزائے موت کا حکم دیا گیاہے جبکہ جسٹس سیٹھ وقار نے فیصلے میں لکھا کہ اگر مشرف فوت ہو جاتے ہیں تو ان کی لاش کو ڈی چوک لایا جائے اور تین روز تک لٹکایا جائے ۔
پاکستان اسٹاک مارکیٹ رواں ہفتے کے چوتھے کاروباری روز ’کریش‘ کر گئی، غیر یقینی ملکی حالات اور سابق صدر جنرل (ر) پرویز مشرف کے عدالتی فیصلے کے بعد 100 انڈیکس میں 948.34 پوائنٹس کی بڑی مندی دیکھی گئی۔ گراوٹ کے باعث حصص مارکیٹ کی 10 حدیں گر گئیں جبکہ انویسٹرزکے 182 ارب روپے ڈوب گئے۔
پرویز مشرف کے خلاف تفصیلی فیصلہ جاری ہونے کے کچھ ہی دیر میں پاکستان اسٹاک ایکسچینج کا 100 انڈیکس 1578 پوائنٹس گر گیا جب کہ اسٹاک ایکسچینج کا اسلامک انڈیکس کے ایم آئی 30 بھی 1800 سے زائد پوائنٹس گر گیا ہے۔تاہم بعد ازاں انڈیکس کسی حد تک بہتر ہوا مگر مندی کا سلسلہ بدستور جاری رہا۔
مندی کے باعث حصص مارکیٹ کا 100 انڈیکس دھڑام سے نیچے آ گیا، گراوٹ کے باعث 41 ہزار کی نفسیاتی حد گرنے کے ساتھ ساتھ 10 حدیں گر گئیں۔ گرنے والی حدوں میں 41600، 41500، 41400، 41300، 41200، 41100، 41000، 40900، 40800، 40700 کی حدیں شامل ہیں۔
کاروبار کے اختتام پر پاکستان اسٹاک مارکیٹ کا 100 انڈیکس 948.34 پوائنٹس کی مندی کے بعد 40655.37 پوائنٹس کی سطح پر پہنچ کر بند ہوا، پورے کاروباری روز کاروبار میں 2.33 فیصد گراوٹ دیکھی گئی۔ کاروباری روز 16 کروڑ 99 لاکھ 15 ہزار 190 شیئرز کا کاروبار ہوا جس کی مالیت 9 ارب 44 کروڑ 34 لاکھ 10 ہزار 842 روپے بنتی ہے۔ جبکہ پورے کاروباری روز انویسٹرزکے 182 ارب روپے ڈوب گئے۔
معاشی ماہرین کا کہنا ہے کہ پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں بڑی مندی کی سب سے بڑی وجہ سابق صدر جنرل (ر) پرویز مشرف کے بارے میں عدالتی فیصلہ ہے، عدالتی فیصلے کے بعد انویسٹرز نے ٹریڈنگ سے ہاتھ روکا ہوا ہے، ملک میں غیر یقینی فضا کے اثرات بین الاقوامی انویسٹرز پر بھی پڑ رہے ہیں جو دیکھو اور انتظار کرو کی پالیسی پر عمل ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *