پاکستان سمیت کئی ممالک میں سال کا پہلا سورج گرہن کل ہو گا

ملک کے بیشتر علاقوں میں دن کے وقت شام کا سماں ہو جائے گا، محکمہ موسمیات

کراچی: (پاکستان فوکس آن لائن)ماہرین فلکیات کے مطابق کئی ممالک میں رواں سال کا پہلا سورج گرہن کل ہوگا جو کہ پاکستان میں بھی دیکھا جا سکے گا۔
تفصیلات کے مطابق کل (اتوار) کو ہونے والا سورج گرہن کراچی میں بھی دیکھا جاسکے گا جب کہ سورج گرہن کے باعث کل 11 بجکر 25 منٹ پر دن رات کا منظر پیش کرے گا۔ محکمہ موسمیات کے مطابق کل پاکستان میں سورج گرہن 9 بجکر45 منٹ پر شروع ہوگا اور دوپہر ایک بجکر 10 منٹ پر ختم ہوگا۔ جب کہ 11بجکر25 منٹ پر مکمل سورج گرہن ہونے سے دن رات میں تبدیل ہوجائے گا۔
محکمہ موسمیات کے مطابق پاکستان کے بیشتر علاقوں میں دن کے وقت شام کا سماں ہو جائے گا اور اس بار سورج گرہن 26 دسمبر 2019 کے مقابلے زیادہ گہرا ہو گا۔محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ پنجاب، بلوچستان اور کے پی کے میں 90 فیصد سورج گرہن ہوگا سورج گرہن آسٹریلیا سے لیکر یورپ تک دیکھا جاسکے گا اس کے علاوہ وسطی ایشیاء اور ایشیائی ممالک میں بھی لوگ سورج گرہن دیکھ سکیں گے۔ماہرین امراض چشم نے 21 جون کو ہونے والے سورج گرہن کو انسانی آنکھوں کے لیے خطرناک قرار دیا ہے۔ ماہرین کے مطابق سورج گرہن کے دوران الٹرا وائلٹ شعائیں نکلیں گی جو انسانی آنکھوں کی بینائی ہمیشہ کے لیے ختم کرسکتی ہیں۔ماہرین امراض چشم کا کہنا ہے کہ سورج گرہن کے دوران 2 گھنٹے تک شعائیں انتہائی خطرناک ہوں گی، لہٰذا شہری سورج گرہن کے دوران گھروں میں رہیں، سورج کی شعائیں ریٹینا پر کالا دھبا ڈال سکتی ہیں، سورج کو براہ راست دیکھنے والوں کی بینائی ہمیشہ کے لیے ختم ہوسکتی ہے، جب کہ سورج گرہن کے دوران خواتین اور بچوں کو خصوصی اختیاط کی ضرورت ہے۔واضح رہے کہ چاند دورانِ گردش زمین اور سورج کے درمیان آ جانے سے سورج گرہن لگتا ہے۔ ماہرین کے مطا بق 70 فیصد سورج گرہن کے بعد درجہ حرارت انتہا ئی کم ہو جاتا ہے، اورروشنی کم ہوجاتی ہے اس لیےبراہ راست سورج کو دیکھنے سے پرہیز کیا جائے ، سورج گرہن صرف فلٹر والی عینک سے ہی دیکھا جا سکتا ہے ۔ گوادر سے سکھر تک کے مختلف علاقوں میں سورج کے گرد روشنی کا یہ دائرہ دیکھا جاسکے گا جبکہ کراچی میں 90 فیصد رنگ فائر نظر آنے کا امکان ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *