مقبوضہ کشمیرمیں آبادی کاتناسب تبدیل ہونا شروع، پاکستان نے اقدام مسترد کر دیا

بھارت کا مقبوضہ کشمیر میں ہندو آبادکاری کیلئے 25 ہزار ڈومیسائل دینا غیرقانونی ہے، پاکستان

اسلام آباد: (پاکستان فوکس آن لائن) بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں ’اسرائیل طرز‘ کی مکروہ سازش کا آغاز کر دیا ہے، پاکستان نے بھارت کے اس اقدام کو مسترد کر دیا ہے۔تفصیلات کے مطابق بھارت نے اسرائیل کے نقشے قدم پر چلتے ہوئے مقبوضہ جموں و کشمیر کی جغرافیائی ہیت، آبادی کا تناسب تبدیل کرنا شروع کر دیا ہے۔ مقبوضہ کشمیر کی کٹھ پتلی انتظامیہ نے نئے ڈومیسائل قانون کا اطلاق شروع کر دیا۔مودی سرکاری نے مقبوضہ کشمیر میں ڈومیسائل اجراء کا آغاز سرکاری افسران سے کیا ہے، بھارتی ایڈمنسٹریٹو سروس کے آفیسر نوین چوھدری کو مقبوضہ کشمیر کا پہلا ڈومیسائل جاری کیا گیا ہے۔ سرکاری آفیسر کا تعلق ریاست بہار سے ہے، نوین چوھدری کو 24 جون کو ضلع جموں کے گاؤں گاندھی نگر کے پتے پر ڈومیسائل اجراء کیا گیا۔
دوسری جانب حکومت پاکستان نے کہا ہے کہ بھارت مقبوضہ کشمیر کے آبادیاتی تناسب میں تبدیلی کی سازشوں میں مصروف ہے، 25 ہزار غیرقانونی ڈومیسائل کے اجرا کو مسترد کرتے ہیں۔دفتر خارجہ نے کہا ہے کہ بھارتی حکومت مقبوضہ کشمیر میں ہندو آباد کاری کے لیے 25 ہزار غیر قانونی ڈومیسائل دے رہی ہے، پاکستان بھارتی سرکار کے اقدامات کو مکمل طور پر مسترد کرتا ہے۔پاکستان نے کہا ہے کہ حالیہ بھارتی اقدامات 5 اگست 2019ء کے غیر قانونی اقدامات کا تسلسل ہیں، یہ اقدامات بی جے پی، آر ایس ایس کے ہندوتوا ایجنڈے کا حصہ ہیں، بھارت مقبوضہ کشمیر کی آبادیاتی تناسب میں تبدیلی کی سازشوں میں مصروف ہے، بھارت ایسا کرکے کشمیریوں کے حق خود ارادیت کو دبانے کی سازش کر رہا ہے۔
ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق پاکستان نے مقبوضہ کشمیر میں غیر قانونی ڈومیسائل دینے کا عمل مسترد کردیا ہے، کشمیریوں نے بھی ان بوگس ڈومیسائل کومسترد کردیا، ڈومیسائل بھارتی سرکاری حکام سمیت غیر کشمیریوں کو دیئے گئے، ڈومیسائل کا اجرا سلامتی کونسل کی قراردادوں کی خلاف ورزی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *