اپوزیشن معاہدے پر قائم رہی تو حکومت بھی پاسداری کرےگی،وزیراعظم

اسلام آباد: (پاکستان فوکس آن لائن)آزادی مارچ اور دھرنے سے نمٹنے کیلئے وفاقی حکومت کی حکمت عملی سامنے آگئی، آزادی مارچ کے شرکا نے دھرنا دیا تو مذاکرات ہوں گے، انتشار کی صورت میں طاقت کا استعمال آخری آپشن ہوگا۔اپوزیشن کیلئے تشکیل حکومتی مذاکراتی کمیٹی ہی مذاکرات کرے گی، پرویز خٹک کمیٹی کی سربراہی کریں گے، وزیر اعظم عمران خان نے پرویز خٹک کمیٹی کو مکمل اختیار دے دیا، مارچ کے شرکا ریڈ زون داخل ہوئے تو سختی سے نمٹا جائے گا۔
وزیراعظم عمران خان نے آزادی مارچ سے متعلق اپوزیشن سے ہونے والے رابطوں پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اپوزیشن معاہدے پر قائم رہتی ہے تو حکومت بھی پاسداری کرےگی۔وزیراعظم عمران خان سے حکومتی مذاکراتی ٹیم اور اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے ملاقات کی جس میں ملک کی موجودہ سیاسی صورت حال اور پارلیمانی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ ٹیم نے وزیراعظم کو اپوزیشن سے مذاکرات میں پیشرفت سے آگاہ کیا۔وزیراعظم نے کہا کہ اپوزیشن معاہدے پر قائم رہتی ہے تو حکومت بھی پاسداری کرےگی، احتجاج میں اسلام آباد کے رہائشیوں کو کسی قسم کا مسئلہ درپیش نہیں ہونا چاہیے۔اسپیکر اسد قیصر نے وزیراعظم کو مسئلہ کشمیر پر پارلیمانی سفارتکاری سے آگاہ کیا اور پارلیمنٹ میں قانون سازی اور ایوان کے موثر کردار پر بھی بات چیت کی۔
اسپیکر نے سیاسی صورت حال اور حزب اختلاف سے رابطوں پر وزیراعظم کو آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن کو پیغام دیا ہے امن و امان کی صورت حال پر سمجھوتہ نہیں ہوگا، کسی بھی قسم کا سیاسی انتشار نہیں پھیلنا چاہیے، اپوزیشن ارکان سے مسلسل رابطے میں ہیں اور معاملات کو افہام و تفہیم سے حل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *