ضمنی انتخاب :پیپلز پارٹی کو اپنے گڑھ میں شکست ، جی ڈی اے کامیاب

لاڑکانہ: (پاکستان فوکس آن لائن) سندھ اسمبلی کے حلقے پی ایس 11 کے ضمنی انتخاب میں پیپلز پارٹی کو اپنے سیاسی گڑھ لاڑکانہ میں گرینڈ ڈیموکریٹ الائنس (جی ڈی اے) کے امیدوار کے ہاتھوں شکست کا سامنا کرنا پڑا۔پی ایس 11 لاڑکانہ میں پولنگ کا عمل صبح 8 بجے شروع ہوا جو شام 5 بجے تک بلا تعطل جاری رہا۔پیپلز پارٹی کے جمیل سومرو اور گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس (جی ڈی اے) کے معظم عباسی کے درمیان سخت مقابلہ تھا۔تمام 138 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری و غیر حتمی نتیجے کے مطابق گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس (جی ڈی اے) کے معظم عباسی نے 31557 ووٹ لے کر کامیابی حاصل کرلی جبکہ پیپلز پارٹی کے امیدوار جمیل سومرو 26021 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔
انتخاب کے باعث حلقے میں عام تعطیل کا اعلان کیا گیا تھا، حلقے میں 138 پولنگ اسٹیشنز قائم کیے گئے تھے جہاں پولنگ کا عمل شام 5 بجے تک جاری رہا، الیکشن کمیشن کے مطابق حلقے میں رجسٹرڈ ووٹرز کی تعداد ایک لاکھ 52 ہزار 614 ہے۔
واضح رہے کہ جی ڈی اے کے امیدوار معظم عباسی کو پی ٹی آئی اور جمعیت علمائے اسلام (ف) کی حمایت حاصل ہے، مذاکرات کی ناکامی پر جمعیت علمائے اسلام (ف) نے پیپلز پارٹی کے امیدوار جمیل سومرو کی حمایت سے انکار کردیا تھا۔

جمہوریت بہترین انتقام ہے، علی زیدی کا ٹوئٹ

پاکستان تحریک انصاف سے تعلق رکھنے والے وفاقی وزیر برائے بحری امور علی زیدی نے پیپلز پارٹی کی شکست پر طنزیہ ٹوئٹ کی ہے۔اپنے ٹوئٹر بیان میں علی زیدی نے لکھا کہ ’جمہوریت بہترین انتقام ہے اور آج لاڑکانہ کے شہریوں نے انتقام لے لیا‘۔
خیال رہے کہ یہ جملہ عام طور پر پیپلز پارٹی کے رہنما استعمال کرتے ہیں کہ جمہوریت بہترین انتقام ہے۔حلقے کے 138 پولنگ اسٹیشنز میں سے 20 کو انتہائی حساس اور 50 کو حساس قرار دیا گیا تھا،کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے بچنے کیلئے حلقے میں سیکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کیے گئے تھے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *