میاں نواز شریف کی نئی میڈیکل رپورٹ سامنے آگئی

نواز شریف کی انجیوگرافی نہیں کرائی گئی تو ان کی جان کو خطرہ ہے

لاہور: (پاکستان فوکس آن لائن)سابق وزیراعظم نواز شریف کی احتساب عدالت میں جمع کروائی گئی میڈیکل رپورٹ سامنے آگئی، رپورٹ میں نواز شریف کی انجیوگرافی جلد کرانے کی سفارش کی گئی ہے۔
میڈیا رپورٹس کے مطابق نواز شریف کی اگر کورونری انجیو گرافی نہیں کرائی گئی تو ان کی جان کو خطرہ ہے۔ نواز شریف کے دل کو خون کی روانی تسلسل سے نہیں ہو رہی ہے۔رپورٹ کے مطابق نوازشریف کے غیر متوازن پلیٹ لیٹس کی وجہ سےان کی حالت خطرے سے دوچار ہوسکتی ہے۔رپورٹ کے مطابق نوازشریف کی طبی معائنہ کیلئے کنسلٹنٹ ہماٹالوجسٹ ڈاکٹر کاظمی سے چوبیس فروری کا وقت لیا گیا ہے۔رپورٹ میں سفارش کی گئی ہے کہ نوازشریف کو علاج کے لیے برطانیہ میں طبی ماہرین کی زیر نگرانی رہنا چاہیے۔
خیال رہے کہ 6 فروری کو سابق وزیر اعظم نوازشریف کی میڈیکل رپورٹس نامکمل ہونے پر پنجاب حکومت نے اعتراضات اٹھا دیے تھے۔نواز شریف کی ضمانت میں توسیع کے حوالے سے نئی میڈیکل رپورٹس پنجاب حکومت کے پاس جمع کرائی گئی تھیں تاہم ڈاکٹرز نے میڈیکل رپورٹس کو نامکمل قرار دے دیا تھا۔سینئر ڈاکٹرز نے اعتراضات اٹھاتے ہوئے کہا تھا کہ ایک خط کے ذریعے کسی بھی مریض کی صحت کو جانچنا ممکن نہیں ہوتا۔ خط کے مندرجات کے ثبوت ساتھ نہیں لگائے گئے ہیں۔محکمہ داخلہ پنجاب پہلے ہی تازہ رپورٹس پر تحفظات کا اظہار کر چکا تھا میڈیکل بورڈ کو حکم دیا تھا کہ نواز شریف کی رپورٹس کا دوبارہ جائزہ لیا جائے۔
واضح رہے کہ سابق وزیر اعظم نواز شریف گزشتہ سال نومبر سے عدالتی حکم پر آٹھ ہفتے کی ضمانت ملنے کے بعد علاج کی غرض سے لندن میں مقیم ہیں جہاں ان کا علاج معالجہ جاری ہے۔نواز شریف کی میڈیکل رپورٹس بھجوانے کا مقصد ان کی بیرون ملک قیام کی مدت میں اضافہ کروانا ہے جو حکومت کی جانب سے تشکیل کردہ میڈیکل بورڈ کی رپورٹ کی روشنی میں ہی کیا جائے گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *