سابق وزیراعظم نواز شریف کوٹ لکھپت جیل منتقل

لاہور: (پاکستان فوکس آن لائن) ضمانت کی مدت ختم ہونے کے بعد پاکستان مسلم ن کے تاحیات قائد اورسابق وزیراعظم نواز شریف کوٹ لکھپت منتقل ہوگئے ہیں۔ جیل منتقلی سے قبل کارکنوں کے نام اپنے پیغام میں نوازشریف نے کہا کہ جیل کی کالی کوٹری سے قوم کی دعاؤں سے نجات ملے گی اور ظلم کی سیاہ رات ختم ہو کر رہے گی۔انہوں نے کہا کہ یہ جانتے ہیں کہ مجھے کس گناہ کی سزا دی جا رہی ہے، انشاءاللہ عوام کی دعائیں رنگ لائیں گی۔سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ عوام کے والہانہ جوش و خروش پر شکریہ ادا کرنے کے لیے میرے الفاظ نہیں۔ان کا کہنا تھا کہ زندہ دلان لاہور کا ساتھ ساتھ چلنے پر شکر گزار ہوں جبکہ کارکنوں کا بھی بہت مشکور ہوں۔مسلم لیگ ن کی نائب صدر اور نوازشریف کی صاحبزادی مریم نواز جیل تک کے سفر کے دوران ان کے ساتھ گاڑی میں سوار تھیں اور حمزہ شہباز گاڑی چلا رہے تھے۔

اپنے قائد سے اظہار یکجہتی کے لیے مسلم لیگ نون کے رہنما ؤں نے جیل کے راستے میں مختلف جگہوں پر استقبالیہ کیمپ لگائے۔پاکستان مسلم لیگ کے سیاسی قیادت بھی اپنے لیڈر سے اظہار یکجہتی کیلئے جاتی امرا پہنچی ہے۔جیل ذرائع کا کہنا ہے کہ نواز شریف کی بیرک کی صفائی کر دی گئی ہے اور وہ اسی بیرک میں رہیں گے جہاں وہ پہلے قید رہے ہیں۔انہیں جیل میں وہی سہولیات میسر ہوں گی جو پہلے ملتی رہی ہیں جن میں ٹی وی، کتب اور اخبارات کی اجازت شامل ہے۔ ذاتی معالج بھی گاہے بگائے جیل میں انکا طبی معائنہ کریں گے۔ نواز شریف کے جیل منتقل ہونے کے بعد ایمبولنس اسپتال بھی جیل پہنچا دیا جائے گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *