بلاول کی فضل الرحمان سے بھی بڑے احتجاج کی دھمکی

راولپنڈی: (پاکستان فوکس آن لائن)چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے وفاقی حکومت کو مولانا فضل الرحمان کے آزادی مارچ سے بھی بڑے احتجاج کی دھمکی دیدی۔
سابق صدر اور اپنے والد آصف علی زرداری سے اڈیالہ جیل میں ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ موجودہ عدالتی نظام ویسا ہی ہے جیسا مشرف کے دور میں تھا، آصف زرداری کے لیے جیل کوئی نئی بات نہیں ہے، وہ پہلے بھی 11 سال جیل کاٹ چکے ہیں، آصف زرداری بیمار ضرور ہیں لیکن ان کے حوصلے بہت بلند ہیں۔
بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ سلیکٹڈ حکومت عوام کے ووٹوں کی وجہ سے نہیں آتی، یہ حکومت بھی دھاندلی کرکے مسلط کی گئی، اس حکومت نے عوام کے لیے کچھ نہیں کیا،عوام کو مہنگائی کے سونامی اور ٹیکس کے طوفان میں دھکیل دیا گیا، عوام نے دیکھ لیا نیازی کا ہر دعویٰ اور وعدہ جھوٹا نکلا،عوام اس حکومت کو گرانے کےلیے تیار ہے۔
چمن میں دھماکے اور جے یو آئی (ف) کے رہنما کے جاں بحق ہونے کی مذمت کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ وہ خود مولانا فضل الرحمان سے مل کر تعزیت اور افسوس کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی دیگر جماعتوں سے رابطے میں ہے، ہم عوام کو بتا رہے ہیں حکومت کس طرح ان کے حقوق پر ڈاکہ ڈال رہی ہے، ان سے ملاقات میں کوئی درمیانی راستہ نکلا تو ان کی حمایت کریں گے۔بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حق خودارادیت کشمیریوں کا حق ہے، تقریر کرنا تو آسان ہوتا ہے ماضی میں بہت سے وزرائے اعظم نے کشمیر کا مقدمہ بہت اچھے طریقے سے لڑا، کیا کسی دوسرے وزیراعظم کے دورمیں کشمیر پر ایسا حملہ ہوا؟ امید تھی کہ عمران خان کی پوری تقریر کشمیر پر ہوگی۔چیئرمین پیپلز پارٹی کا کہنا تھا کہ ہم نہ ڈیل کر سکتے ہیں اور نہ ڈیل چاہتے ہیں، ڈیل پر لعنت بھیجتے ہیں، ہم لڑنا جانتے ہیں اور لڑیں گے، وزیراعلیٰ سندھ کو گرفتار کرنا ہے تو کر لیں، پیپلزپارٹی جانتی ہے کہ اس کا نتیجہ کیا نکلے گا؟ انہیں گرفتار کیا گیا تو یہ حد پار کرنے کے مترادف ہوگا، سندھ پر اگر غیر آئینی حملہ ہوا تو ایک زبردست مہم چلائیں گے، ہم ایسی تحریک چلائیں گے کہ آپ آزادی مارچ بھول جائیں گے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *