قانون کے مطابق نوکریاں نہ ملنا،وزیراعلیٰ سندھ کیلئے شرم کی بات ہے،خواجہ اظہار

سندھ کو خطرہ سندھ کے حکمرانوں سے ہے، سندھ پبلک سروس کمیشن بدنام ترین ادارہ ہے

کراچی: (پاکستان فوکس آن لائن)خواجہ اظہار الحسن نے کہا ہے کہ اگر سندھ میں نوکریاں قانون کے مطابق نہیں مل رہیں تو یہ وزیراعلیٰ سندھ کے لیے شرم کی بات ہے۔
بہادرآباد میں قائم پارٹی کے عارضی مرکز میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ایم کیو ایم کے رہنما خواجہ اظہار الحسن کا کہنا تھا کہ گریڈ ایک سے پندرہ تک کی ملازمتیں سندھ کے شہری علاقوں کے مقامی لوگوں کی ہیں، ایک سے پندرہ گریڈ کی نوکری قانون کی مطابق اسی ضلع کے افراد کو ملنی چاہئے، سندھ کے عوام کو کسی سے خطرہ نہیں سندھ کے حکمرانوں سے خطرہ ہے،سندھ کی عوام کو بےوقوف بنانا بند کرو قانون موجود ہے کسی نئے قانون کی ضرورت نہیں، اگر سندھ میں نوکریاں قانون کے مطابق نہیں مل رہیں تو یہ وزیراعلیٰ سندھ کے لیے شرم کی بات ہے۔
خواجہ اظہار الحسن نے کہا کہ اگر تم نے کوٹہ لگایا ہے تو ہمیں کوٹہ کا چالیس سال کا حساب چاہئے،سندھ پبلک سروس کمیشن بدنام ترین ادارہ ہے، سندھ پبلک سروس کمیشن مہاجر دشمن ادارہ ہے،کوئی ٹی وی چینل نہیں جس نے سندھ پبلک سروس کمیشن کی بدنامی کے چرچے نہیں کئے،کیا کراچی کے شہر میں ٹیلنٹ نہیں ہے، پولیس میں ہم پر پابندی کیوں لگائی ہے، کیا کراچی کے شہری فوج میں نہیں ہیں، پولیس میں کیوں بھرتی نہیں ہو سکتے،کوئی سندھی بھائی میرے حلقہ میں ایس ایچ او لگ جائے مجھے کوئی اعتراض نہیں،اربن رورل ذوالفقار علی بھٹو نے کچھ سوچ کر ہی بنایا ہو گا، اس پر عملدرآمد کرو، ذوالفقار بھٹو تو کہتا رہا چالیس فیصد شہری علاقوں کا حق ہےساٹھ فیصد باقی سندھ کا، انہوں نے اپنا ساٹھ فیصد بھی بیچ دیا اور سندھ کے شہروں کا بھی لے لیا۔
ان کا مزید کہنا تھا کہ پانچ سال سے جعلی ڈومیسائل پر ہر فورم پر ملاقات کی،سی ایم سمیت کسی فورم سے ہمیں داد رسی نہیں کی گئی،امید ہے عدالت جعلی ڈومیسائل کیس کا جلد فیصلہ کرے گی،سندھ حکومت نے جعلی ڈومیسائل پر کمیٹی بناکر توہین عدالت کی ہے،نوٹیفکیشن عدالتی کارروائی ہر اثر انداز ہونے کا ہتھکنڈہ ہے، نوٹیفکیشن غیر قانونی غیر آئینی ہے اور نوٹس میں جو ممبر ہیں انہوں نے عدالت میں جعلی ڈومیسائل کی نفی کی ہے جبکہ سی ایم چیف سیکرٹری اور تمام کمشنر،ڈپٹی کمشنرز عدالت کے نوٹس پر ہیں،ہمارا حق ہے کہ ہم عوام کو حقائق سے آگاہ کریں۔
ان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان میں شناخت بیچنے والوں کو شرم سے مرجانا چاہئے،پاکستان کے قوانین میں تمام چیزیں واضح ہیں،کراچی،حیدر آباد کے لوگوں کو بہت بڑا دھوکا دیا گیا ہے، پی ٹی آئی بھی کراچی سے منتخب ہوئی ہے،پی ٹی آئی کیوں جعلی ڈومیسائل پر خاموش ہے، ہم اب کچرا صاف کرنے کی تیاری کر رہے ہیں،ہم ہر طرح کا کچرا صاف کریں گے۔
خواجہ اظہارالحسن نے کہا کہ سندھ کا کوئی بھی دانشور، سیاستدان آئے ہم سے بات کرے، لسانیت نہ پھیلائے،نوکریوں کی ناانصافی ختم ہو گی تو ہم بتائیں گےنوکریاں کیسے میرٹ پر ہوتی ہیں،ہم سندھ کی دوسری بڑی اکائی کے علمبردار ہیں،کچھ چیزیں ایسی ہیں جن پر اختلاف کی ضرورت نہیں، اگر کسی کو ایم کیو ایم سے ہاتھ نہیں ملانا تو عدالت میں پٹیشنر اپنے طور پر بنیں اور ایم کیو ایم کا ساتھ دیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *