سری لنکا کے سابق وزیر نے ورلڈکپ 2011 فائنل کو فکسڈ قرار دیدیا

اگر سابق وزیر کے پاس میچ کےفکسڈ ہونے کے شواہد ہیں تو وہ آئی سی سی کے حوالے کریں، سابق کپتان کماراسنگا کارا

کولمبو: (پاکستان فوکس آن لائن)سابق سری لنکن وزیر کھیل ماہن دادا نے 2011 ورلڈ کپ فائنل کو فکس قرار دے دیا۔اپنے ایک بیان میں سابق سری لنکن وزیر کھیل ماہن دادا نے 2011 ورلڈ کپ فائنل کو فکس قرار دے دیا۔ سابق سری لنکن وزیر کھیل نےکہا کہ میچ فکسنگ میں کھلاڑی ملوث نہیں تھے، لیکن کوئی اور لوگ شامل تھے۔
تفصیلات کے مطابق سری لنکا کے سابق وزیر نے 2011 ورلڈکپ میں بھارت اور سری لنکا کے میچ کو فکسڈ قرار دے کر نیا پنڈورا باکس کھول دیا۔کرکٹ کرپشن واقعات نے پہلے ہی سری لنکن کرکٹ کے درودیوار کو ہلا کر رکھ دیا ہے، اوپر سے سابق وزیر کے تازہ ترین الزامات نے جلتی پر تیل کا کام کیا ہے جب کہ آئی سی سی بھی مختلف پہلوؤں سے اپنی تحقیقات کررہی ہے۔
سابق وزیر کے الزامات پر سابق کپتان کماراسنگا کارا کا کہنا ہے کہ اگر سابق وزیر کے پاس اس میچ کےفکسڈ ہونے کے شواہد ہیں تو وہ آئی سی سی کے اینٹی کرپشن یونٹ کے حوالے کرے تاکہ اس بارے میں مکمل تحقیقات ممکن ہوسکیں۔ سوشل میڈیا پر بعض حلقوں نے سابق وزیر کے الزامات پر حیرانی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کرکٹرز کے بغیر کوئی میچ کیسے فکسڈ ہوسکتا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *