سندھ حکومت نے عذیر بلوچ سمیت تمام جے آئی ٹیز کو پبلک کرنے کا اعلان کردیا

پیر کے روز ہوم ڈپارٹمنٹ کی ویب سائٹ پر تمام جے آئی ٹیز کی کاپی کو اپ لوڈ کردیا جائے گا

کراچی: (پاکستان فوکس آن لائن) پاکستان انٹرنیشنل ائیر لائن (پی آئی اے) کی رپورٹ منظر عام پر آنے کے بعد سندھ حکومت نے نثار مورائی، عزیر بلوچ اور بلدیہ فیکٹری میں آتشزدگی کے واقعے کی جے آئی ٹی رپورٹس پبلک کرنے کا اعلان کردیا۔جے آئی ٹی رپورٹ پیر کو پبلک کی جائے گی۔ سندھ حکومت کے ترجمان مرتضی ٰ وہاب نے کراچی میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سابق چیئرمین فشر مین کوآپریٹو سوسائٹی نثار مورائی، بلوچ امن کمیٹی کے سربراہ عزیربلوچ اور بلدیہ فیکٹری میں آتشزدگی کے واقعے کی جے آئی ٹی رپورٹس کو جلد پبلک کرنے جارہے ہیں۔ترجمان سندھ حکومت مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ عزیر بلوچ کی جے آئی ٹی میں پیپلزپارٹی قیادت کانام نہیں ،جے آئی ٹی پر تمام اداروں کے افسران کے دستخط موجود ہیں،سندھ حکومت تمام جے آئی ٹیز کو پبلک کرے گی۔مرتضیٰ وہاب نے مزید کہا کہ علی زیدی عزیر بلوچ اور نثار مورائی جے آئی آٹی پر بات کرتے ہیں، ریکارڈ کی درستگی کےلیے جے آئی ٹی رپورٹس کو پبلک کریں گے۔
انہوں نے کہا کہ وفاقی وزیربرائے بحری امور علی زیدی نے قومی اسمبلی میں عزیربلوچ جے آئی ٹی رپورٹ کے حوالے سے دعویٰ کرتے ہوئے پیپلزپارٹی کی قیادت پر بے بنیاد الزامات عائد کیے تھے، علی زیدی اپنے محکمہ سے متعلق جوا ب دینے سے قاصر ہیں، علی زیدی کو چیلنج کرتا ہوں کہ جے آئی ٹی میں پیپلزپارٹی قیادت کا ذکر بتائیں۔ ملک کے فیصلے کون کررہاہے؟کسی کو علم نہیں، علی زیدی کاغذات پڑھنے کے بجائے صرف تبصرے کرتے ہیں۔ اگر علی زیدی چاہیں تو ان کو تمام دستاویزات بھجوا دیتا ہوں۔انہوں نے کہا کہ جے آئی ٹیز میں جن جن کے نام ہیں ان کے خلاف کارروائی ہونی چاہیے، ذوالفقار مرزا کے بیانات ریکارڈ پر ہیں ،کیا ان کے خلاف کارروائی نہیں ہونی چاہیے۔ علی زیدی اپنے اتحادی ذوالفقار مرزا کے حوالے سے کچھ بتائیں۔
مرتضیٰ وہاب نے تحریک انصاف حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ دہری شہریت پر کوئی وزیر بات نہیں کرتا، گندم کے حوالے سے عوام کے ذہنوں میں سوالات ہیں، ٹڈی دل سے فصلیں متاثر ہوگئی ہیں لیکن حکومت نے ابھی تک کچھ نہیں کیا۔ حکومتی اراکین اسمبلی فلور پر صرف غیرذمہ دارانہ تقاریر کرتے ہیں۔مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ عمران خان نے نوکری دینا تو دور اب سرکاری ملازمین کو فارغ کرنا شروع کردیا،حکومت کی خاصیت ہے کہ کوئی وزیر اپنے محکمہ کاجواب نہیں دیتا۔

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *