وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کااجلاس

وفاقی کابینہ نےارشد ملک کو پی آئی اے کا چیف ایگزیکٹو تعینات کرنے کی منظوری دیدی

جعلی لائسنس والے پی آئی اے کے 28 پائلٹس کو فارغ کردیا گیا، شبلی فراز

اسلام آباد: (پاکستان فوکس آن لائن)وفاقی وزیر اطلاعات سینیٹر شبلی فراز کا کہنا ہے کہ جعلی لائسنس والے پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائن (پی آئی اے) کے 28 پائلٹس کو نوکری سے نکال دیا گیا ہے۔
وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کے اجلاس میں ارشدملک کو پی آئی اے کا چیف ایگزیکٹو تعینات کرنے کی منظوری دے دی گئی۔تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کااجلاس ہوا، جس میں 16 نکاتی ایجنڈے سمیت ملکی سیاسی، معاشی اورکورونا وباء کے باعث پیدا صورتحال پر غور کیا گیا۔
وفاقی کابینہ نے ارشد ملک کو پی آئی اے کا چیف ایگزیکٹوتعینات کرنےکی منظوری دے دی اور فیصلہ کیا کہ ارشدملک ریٹائرمنٹ کے بعد بھی پی آئی اے کے چیف ایگزیکٹو رہیں گے، ایئرمارشل ارشد ملک 12 جولائی کو پاکستان ایئر فورس سے ریٹائر ہو جائیں گے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ ارشد ملک ریٹائرمنٹ کے بعد بقیہ مدت کنٹریکٹ پر چیف ایگزیکٹو ہوں گے، ان کو 3سال کے لیے پی آئی اے کا چیف ایگزیکٹومقرر کیا گیا ہے۔اجلاس میں وفاقی کابینہ کو مشکوک ڈگریوں والے پائلٹس کے معاملےپر تفصیلی بریفنگ دی گئی ۔
وفاقی کابینہ کے اجلاس کے بعد بریفنگ دیتے ہوئے شبلی فراز نے کہا کہ وفاقی کابینہ کو کورونا وبا سے متعلق تفصیلی طور پر آگاہ کیا گیا، کورونا وبا سے نمٹنے میں نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشنز سینٹر (این سی او سی) نے موثر کردار ادا کیا اور دیگر ممالک کے مقابلے میں کورونا سے پاکستان بہت کم متاثر ہوا۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نے عید الاضحی اپنے گھر پر منانے کا فیصلہ کیا ہے، کورونا کی روک تھام کے لیے موجودہ حکومت کی حکمت عملی بہت کامیاب رہی اور عمران خان نے پاکستان کے زمینی حقائق دیکھ کر کورونا سے متعلق حکمت عملی اپنائی ہے۔مشکوک لائسنس والے پائلٹس سے متعلق شبلی فراز نے کہا کہ پی آئی اے کے جعلی لائسنس والے 28 پائلٹس کو نوکری سے نکال دیا گیا ہے، تمام مشکوک لائسنس پیپلز پارٹی اور (ن) لیگ کے دور میں جاری ہوئے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *