وفاقی کابینہ نے اسٹیل ملز کی نجکاری کی منظوری دے دی

وزیراعظم کی پیٹرول کی قلت پیدا کرنے والوں کے خلاف کارروائی کی ہدایت

اسلام آباد: (پاکستان فوکس آن لائن)وفاقی کابینہ نے اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) کے فیصلوں کی توثیق کرتے ہوئے پاکستان اسٹیل ملز کی نجکاری کی منظوری دیدی۔تفصیلات کے مطابق وفاقی کابینہ کے اجلاس میں حکومت نے پاکستان اسٹیل ملز کی نجکاری کا اصولی فیصلہ کرلیا۔وفاقی کابینہ نے ای سی سی اجلاس کے فیصلوں کی توثیق کردی۔کابینہ اجلاس میں وفاقی کابینہ کو ملک میں کوویڈ- 19کی موجودہ صورتحال پر بریفنگ دی گئی ۔ اجلاس میں وفاقی کابینہ نے سٹیل ملز سے متعلق ای سی سی کے فیصلے کی بھی منظوری دے دی اور وفاقی حکومت سٹیل مل کی نجکاری کرے گی اوراجلاس میں ملازمین کو گولڈن ہینڈ شیک دینے پر اتفاق کیا گیا ہے۔کابینہ اجلاس میں وزیراعظم عمران خان نے ہدایت کی کہ ملکی مفاد کے ساتھ ساتھ مزدوروں کا خاص خیال رکھا جائے۔
وفاقی کابینہ کے اجلاس میں وزیراعظم عمران خان نے ملک میں جاری پیٹرول بحران پر سخت تشویش کا اظہار کیا اور اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ اوگرا سمیت ذمہ داروں سے رعایت نہیں برتی جائے گی۔ وفاقی حکومت کی جانب سے آئندہ 24گھنٹے میں اہم فیصلوں کا امکان ہے۔
تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ اجلاس ہوا ، جس میں 8 نکاتی ایجنڈا پر غور کیا گیا اور تازہ سیاسی اور معاشی صورت حال کا جائزہ لیا گیا۔وفاقی کابینہ نے ملک میں پٹرول کی مصنوعی قلت کا نوٹس لیتے ہوئے معاملہ وزیراعظم کے سامنے اٹھا دیا،وفاقی وزرااجلاس میں استفسار کیا پٹرول بحران کون پیدا کررہاہے؟ اوگراحالیہ بحران میں بحیثیت ریگولیٹرناکام دکھائی دے رہاہے، بعض کابینہ اراکین نے وزیرتوانائی عمر ایوب سے بھی سخت سوالات کئے۔وزیراعظم عمران خان نے بھی حالیہ پٹرول کی قلت پرسخت تشویش کا اظہار کرتے ہوئے سخت فیصلوں کو عندیہ دے دیا اور فیصلہ کیا اوگراسمیت ذمہ داروں سے رعایت نہیں ہوگی۔وفاقی حکومت کی جانب سے آئندہ 24گھنٹے میں اہم فیصلوں کا امکان ہے، وفاقی وزرا نے پرائیویٹ اسپتال مافیاکےخلاف بھی ایکشن کامطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ پرائیویٹ اسپتال مافیا غریب عوام کو لوٹنے کی منصوبہ بندی کر رہا ہے۔
وفاقی وزیر مراد سعید اور فیصل واوڈا نے معاملہ کابینہ کے سامنے اٹھایا اور کہا نجی اسپتال مافیا کورونا کے چکر میں عوام کو لوٹ رہے ہیں، صوبائی حکومتوں کو انتظامی معاملات بہتر کرنے کی ہدایت کی جائے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *