کراچی کے قریب گہرے سمندرمیں ڈرلنگ کے دوران تیل و گیس کے ذخائر نہ مل سکے

اسلام آباد: (پاکستان فوکس آن لائن) کراچی کے سمندر میں تیل و گیس کی تلاش سے مطلوبہ نتائج حاصل نہیں ہوئے جس کے بعد کھدائی کا عمل روک دیا گیا ہے۔تیل و گیس کی تلاش کیلئے پاک ایران سمندری حدود کے قریب کھدائی کی جارہی تھی۔ وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے پیٹرولیم ندیم بابر نے کراچی کے قریب گہرے سمندر میں ڈرلنگ کے دوران تیل و گیس کے ذخائر نہ ملنے کی تصدیق کردی۔ معاون خصوصی ندیم بابر کا کہنا تھا کہ کراچی کے قریب گہرے سمندرمیں ڈرلنگ کےدوران تیل و گیس کےذخائر نہیں مل سکے ہیں۔میڈیا رپورٹس کے مطابق ای این آئی، ایگزون، پی پی ایل اور او جی ڈی سی ایل کمپنی نے چار ماہ تک سیکٹر کیکڑا ون میں ڈرلنگ کی لیکن مطلوبہ نتائج نہیں مل سکے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ مطلوبہ نتائج نہ ملنے کی رپورٹ وزیراعظم کو بھی بھجوا دی گئی اور کمپنیوں نے کیکڑا ون میں سوراخ بند کرنے کا عمل شروع کردیا ہے۔
خیال رہے کہ آج ہی پشاور میں وزیراعظم عمران خان نے اپنے خطاب میں کہا تھا کہ ایک ہفتے میں سمندر سے گیس کے ذخیرے کا پتا چل جائے گا۔وزیراعظم عمران خان نے عوام سے دعا کی اپیل بھی کی تھی اور کہا کہ کراچی سے آگے سمندر میں گیس کا کنواں کھودا جارہا ہے، لگتا ہے کہ ایک ہفتے کے اندر پتا چل جائے گا ، ہوسکتا ہے وہاں سے گیس کا اتنا ذخیرہ ملے کہ پاکستان کو 50 سال گیس باہر سے منگوانی ہی نہ پڑے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *