یکم جولائی سے سعودیہ سے مؤخرادائیگیوں پر تیل ملنا شروع ہوجائے گا، مشیر خزانہ

اسلام آباد: (پاکستان فوکس آن لائن) سعودی عرب سے پاکستان کیلئے اچھی خبر آگئی، سعودی عرب پاکستان کو مؤخر ادائیگی پر تین سال تک سالانہ 3 ارب 20 کروڑ ڈالر کا تیل فراہم کرے گا۔ سعودی عرب 3 سال تک پاکستان کو سالانہ تین ارب بیس کروڑ ڈالر کا تیل ادھار دے گا، یکم جولائی سے ترسیل کا آغاز، پاکستان کی ادائیگیوں کا توازن بہتر ہوگا، مشیر خزانہ حمایت پر سعودی ولی عہد کے شکر گزار
مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ نے سماجی رابطے کی ایک ویب سائٹ پر پیغام جاری کیا ہے کہ سعودی عرب تین سال تک پاکستان کو 3 ارب 20 کروڑ ڈالر کا تیل ادھار دینے کے عمل کی شروعات یکم جولائی سے کر رہا ہے۔ انہوں اس امر پر سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کا شکریہ بھی ادا کیا۔

مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ نے بتایا کہ سعودی عرب یکم جولائی 2019ء سے پاکستان کو پٹرولیم مصنوعات کی مد میں ماہانہ بنیادوں پر 275 ملین امریکی ڈالر کی ادائیگی چالو کر رہا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ سعودی عرب تین سال تک پاکستان کو 3 ارب 20 کروڑ ڈالر کا تیل ادھار دے گا۔ اس سے پاکستان کی ادائیگیوں کے توازن کی پوزیشن بہتر ہوگی۔

مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ نے مزید کہا کہ پاکستان کے عوام کی حمایت پر سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کا شکر گزار ہوں۔

دوسری طرف ترجمان وزارت خزانہ ڈاکٹر خاقان حسن نجیب نے کہا ہے کہ مالی سال کے دس ماہ میں جاری کھاتوں کے خسارے میں ستائیس فیصد کمی آئی ہے۔ایک ٹویٹ پیغام میں ترجمان وزارت خزانہ ڈاکٹر خاقان حسن نجیب نے کہا کہ بیرونی شعبہ استحکام کی جانب گامزن ہے۔ مالی سال کے دس ماہ میں جاری کھاتوں کے خسارے میں ستائیس فیصد کمی آئی جبکہ جولائی تا اپریل جاری کھاتوں کا خسارہ گیارہ ارب ساٹھ کروڑ ڈالر رہا۔گزشتہ مالی سال کے اسی عرصے میں جاری کھاتوں کا خسارہ پندرہ ارب نوے کروڑ ڈالر تھا۔ اشیا کی درآمدات میں چار اعشاریہ نو فیصد جبکہ خدمات کی درآمدات میں انیس فیصد کمی ہوئی۔ زیر جائزہ مدت میں ترسیلات زر میں آٹھ اعشاریہ پانچ فیصد اضافہ ہوا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *