آصف علی زرداری نے چیئرمین نیب کیخلاف کارروائی کا مطالبہ کر دیا

اسلام آباد: (پاکستان فوکس آن لائن)سابق صدر آصف علی زرداری نے چیٔرمین نیب کے خلاف قانونی کارروائی کا مطالبہ کردیا ہے۔ اسلام آباد کی احتساب عدالت میں مبینہ جعلی بنک اکاؤنٹس کیس میں پیشی کے موقع انہوں نے کہا کہ چیئرمین نیب کا عہدہ ان کو انٹرویو دینے کی اجازت نہیں دیتا، چیرمین نیب کے خلاف کارروائی کریں گے۔اسلام آباد کی احتساب عدالت میں پیشی کے بعد ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے گفتگو میں سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا کہ 80 سال کے بوڑھوں کو عدالت میں لایا جارہا ہے،ابھی تو قانون یہ کہتا ہے کہ ملزم عدالت کا پسندیدہ بچہ ہوتاہے ۔ ابھی کسی پر الزام بھی نہیں ہے اور نہ ہی کچھ ثابت ہواہے ، ابھی تک تو کوئی جرم ثابت نہیں ہوا لیکن بینکرز کوہتھکڑیاں لگا کر پیش کیا جارہا ہے۔آصف زرداری نے کہا کہ بوڑھوں کو جیلوں میں بھی ڈالو اور اکانومی بھی چلاؤ؟ تو پھریہ سب کیسے چلے گا؟واضح رہے کہ گزشتہ کچھ عرصے سے سابق صدر آصف علی زرداری اور چیئرمین نیب ذرائع ابلاغ کو ایک دوسرے کے خلاف بیانات دیتے چلے آرہے ہیں۔چیئرمین قومی احتساب بیورو (نیب) جسٹس (ر) جاوید اقبال نے 2مئی کو کہا تھا کہ نیب اور معیشت ساتھ ساتھ چل سکتے ہیں البتہ نیب اور بدعنوانی اکٹھے نہیں چل سکتے۔ملتان میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ان دنوں بہت سے سقراط اور بقرط سامنے آ رہے ہیں جنہوں نے نیب کا قانون تک نہیں پڑھا اور وہ اس پر تبصرے کر رہے ہیں۔چیئرمین نیب کا کہنا تھا کہ نیب اگر کالا قانون ہوتا تو سپریم کورٹ اسے ختم کر دیتی، ایک صاحب کا کہنا ہے کہ نیب منی لانڈرنگ کا ادارہ ہے، نیب پیرس میں جائیداد بنانے کے لیے منی لانڈرنگ نہیں کرے گا۔انہوں نے کہا کہ غلطی اور جرم میں فرق ہے، غلطی کو نظرانداز کیا جا سکتا ہے لیکن جرم کو نہیں کیونکہ اس سے معاشرے میں بگاڑ پیدا ہوتا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *