وزیر اعظم نے ایمنسٹی اسکیم میں توسیع کا عندیہ دے دیا

اسلام آباد: (پاکستان فوکس آن لائن) وزیر اعظم عمران خان نے 30 جون کو ختم ہونے والی ایمنسٹی اسکیم میں توسیع کا عندیہ دے دیا اور کہا ہے کہ بڑی تعداد میں لوگ ایمنسٹی اسکیم سے فائدہ اٹھا رہے ہیں اور مزید لوگ فائدہ اٹھانا چاہتے ہیں۔تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم نے کہا ہے کہ 30 جون کو ایمنسٹی اسکیم کی ڈیڈ لائن ختم ہونے کے بعد آئندہ 48 گھنٹوں میں لائحہ عمل سامنے لائیں گے، میں تاجروں کو یقین دلاتا ہوں کہ فائلر بننے کے بعد کوئی ادارہ آپ کو تنگ نہیں کرے گا جب کہ تاجروں کے ری فنڈ کا معاملہ خود دیکھوں گا۔
وزیراعظم نے کہا کہ اس ملک کا سب سے بڑا مسئلہ قرضوں کا ہے عوام ٹیکس نہیں دیں گے تو ملک قرضوں کی دلدل سے نہیں نکلے گا ہم سب کو مل کر ملک کو قرضوں سے نکالنا ہے، کرپشن کی وجہ سے ملک میں بے روزگاری اور مہنگائی بڑھتی ہے اور ملکی ادارے تباہ ہوتے ہیں۔
عمران خان نے کہا کہ ترقی یافتہ ممالک میں ٹیکس کا پیسہ عوام پر خرچ ہوتا ہے لیکن یہاں ٹیکس کلچر بنا ہی نہیں، پاکستان کے عوام سب سے کم ٹیکس دیتے ہیں، حکمرانوں کی وجہ سے پاکستان میں ٹیکس کلچر کا نظام نہیں اور ایف بی آر کی بدعنوانی سے ملک میں ٹیکس سسٹم خراب ہوا، لوگوں کو ایف بی آر پر اعتماد ہی نہیں اس لیے ٹیکس جمع کرنے کے لیے ایف بی آر کو ٹھیک کرنا ہے۔
وزیر اعظم نے مزید کہا کہ ملکی بہتری کے لیے پاک فوج نے اپنے بجٹ میں کٹوتی کی، وزرا نے تنخواہیں کم کیں، قوم چاہے تو 8 ہزار ارب روپے اکٹھا ہوسکتا ہے، قوم فیصلہ کرے کہ ہمیں ملک کو اپنے پاؤں پر کھڑا کرنا ہے۔
وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ہم اپنے کاروباری طبقے کو اوپر اٹھائینگے، ہماری حکومت بزنس فرینڈلی ہو گی۔ 1960ء کے بعد تحریک انصاف کی حکومت کاروباری طبقے کیلئے بزنس فرینڈلی ہوگی۔ بجٹ میں انڈسٹری ، بزنس کمیونٹی، برآمدات کو بڑھانے کی کوشش کی۔ احساس پروگرام غربت کے خاتمے کیلئے لیکر آئے۔ جب حکمران جوابدہ ہوتا ہے تو ملک میں قانون آ جاتا ہے، ہم فضول خرچی کنٹرول کر کے آمدن بڑھائیں گے۔ فضول خرچی کم کرکے آمدنی بڑھائیں گے۔ان کا کہنا تھا کہ انگریز کی حکومت سے ٹیکس چرانا برا نہیں سمجھا جاتا تھا۔ انگریز نے ہمیں غلام بنا کر رکھا ہوا تھا۔ ہم پہلی نسل تھی جو آزاد پاکستان میں پیدا ہوئی تھی۔ یہ قوم دنیا کو مثال دینے کے لیے بنی تھی۔ ہمیں اپنا مائنڈ سیٹ تبدیل کرنے کی ضرورت ہے۔ پانچ فیصد پاکستانیوں کو ہیپا ٹائٹس سی ہے۔
میاں نواز شریف کی طرف اشارہ کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ تین بار وزیراعظم رہنے والے کے بچے ملک سے باہر ہیں۔ کرپشن ملک کے ادارے تباہ کر دیتی ہے، سابق حکمرانوں نے کرپشن کے خاتمے میں کوئی کردار ادا نہیں کیا اور ادارے تباہ کیے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *