ٹرمپ نے امریکی تاریخ کے سب سے بڑے مالیاتی پیکیج پر دستخط کردیے

کرونا وائرس، امریکا میں 1 لاکھ افراد متاثر، 2 کھرب ڈالرز کے ریلیف بل کی منظوری

واشنگٹن: (پاکستان فوکس آن لائن) امریکی صدر نے ملکی تاریخ کے سب سے بڑے بیل آؤٹ پیکیج پر دستخط کردیے۔امریکا میں کورونا وائرس کے باعث صورتحال انتہائی خراب ہونے کے بعد سینیٹ نے معاشی نقصان کے ازالے کے لیے گزشتہ روز 2 کھرب ڈالرزکے مالیاتی پیکیج کی منظوری دی تھی۔برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق صدر ٹرمپ نے اس مالیاتی پیکیج پر وائٹ ہاؤس میں دستخظ کیے جب کہ اس تاریخی موقع پر کسی ڈیموکریکٹ ممبر کو مدعو نہیں کیا گیا تھا۔
ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ بحران کے خاتمےکے لیے تمام اختیارات استعمال کروں گا۔امریکی صدر نے ڈیفنس پروڈکشن ایکٹ پر عمل درآمد کے لیے پیٹر نوارو کو مشیر مقرر کردیا۔ انہوں نے کہا کہ وینٹی لیٹرز بنانے والی تمام بڑی کمپنیوں کو متحرک کر رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ریلیف بل کے 2.2 کھرب ڈالرز برابری کی بنیاد پر تقسیم کیے جائیں گے، تاریخی بل منظور کرنے پر تمام اراکین کا شکر گزار ہوں۔صدر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ ایپل، ٹاسک فورس کے تعاون سے نئی ایپ تیار کر رہا ہے، ایپ کرونا ٹیسٹنگ میں مددگار ثابت ہوگی۔ روزانہ کی بنیاد پر ایک ہزار لوگوں کے کرونا کے ٹیسٹ کر رہے ہیں، امریکاا س وبا کا بہادری سے مقابلہ کر رہا ہے، کرونا کے خلاف جنگ جیتنے کے لیے تمام وسائل استعمال کریں گے۔
انہوں نے کہا کہ برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن نے مجھ سے وینٹی لیٹرز مانگے ہیں۔ جاپان، اٹلی، اسپین سمیت دیگر ممالک بھی مدد مانگ رہے ہیں۔ ہماری پہلی ترجیح امریکیوں کی مدد کرنا ہے۔ چاہتا ہوں کہ پورے ملک کو جلد از جلد کھولا جائے۔ٹرمپ کا کہنا تھا کہ تمام ریاستیں وفاق کی تعریف کریں، شکایتیں نہیں۔ سیاسی بنیادوں پر ریاستیں اداروں پر تنقید نہ کریں۔ میڈیا اور ریاستی گورنرز تنقید سے باز رہیں۔ چین کے صدر کے ساتھ ویکسین کی تیاری پر بات ہوئی، کرونا کی ویکسین تیار کرنے کے بہت قریب پہنچ چکے ہیں۔
انہوں نے مزید کہا کہ شہری اندرون ملک سفر سے گریز کریں، لوگوں کی نقل و حرکت پر پابندی سے نئے مسائل جنم لے سکتے ہیں۔ پریس کانفرنس کے دوران صدر ٹرمپ نے ایک اور غلط دعویٰ کردیا، انہوں نے کہا کہ امریکا دنیا میں سب سے زیادہ کرونا ٹیسٹنگ کر رہا ہے۔صدر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ ملیریا کی دوائی پر تجربات جاری ہیں، اگر کوئی دوا کام کرتی ہے تو زبردست ورنہ کچھ اور آزمائیں گے، ٹیسٹنگ ہو رہی ہے لیکن تجربات پر زیادہ وقت ضائع نہیں کرنا چاہتا۔خیال رہے کہ امریکا میں کرونا وائرس کے متاثرین کی تعداد 1 لاکھ سے تجاوز کر گئی، امریکا کرونا سے ہلاکتیں 15 سو سے زائد ہوگئی ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *