آئندہ کسی بھی تاجر کو نیب کے آفس نہیں بلایا جائے گا : چیئرمین نیب

نیب کو ڈکٹیشن کا سوچنے والے احمقوں کی جنت میں رہتے ہیں: جاوید اقبال

اسلام آباد: (پاکستان فوکس آن لائن)چئیرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے کہا ہے کہ نیب نے آج تک ایسا قدم نہیں اٹھایا جو ملکی معیشت کے لئے نقصان دہ ہو۔ بزنس کمیونٹی کو ڈرایا جا رہا ہے، نیب نے کسی بزنس مین کو ہراساں نہیں کیا، یہ انسان دوست ادارہ ہے۔ نیب کو ڈکٹیشن کا سوچنے والے احمقوں کی جنت میں رہتے ہیں۔قومی احتساب بیورو(نیب) کے چیئرمین جسٹس(ر) جاوید اقبال کا کہنا ہے کہ معیشت کی زبوں حالی میں نیب کا کوئی قصور نہیں۔چیئر مین نیب نے تاجر برادری کیلئے شاندار اعلان کرتے ہوئے کہاہے کہ آئندہ کسی بھی بزنس مین کو نیب دفترمیں نہیں بلایا جائے گا بلکہ انہیں سوالنامہ بھجوایا جایا کرے گا ۔چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے کہاہے کہ میری کاروباری کمیونٹی سے گزارش ہے کہ انہیں کسی قسم کا بھی خوف نہیں ہونا چاہیے ، میں پالیسی بیان دے رہاہوں کہ آئندہ کسی بھی کاروباری شخص کو نیب میں نہیں بلایاجائے گا ، ہم انہیں سوالنانہ بھیج دیں گے اور وہ ان کے جوابات دیدیں گے ۔اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے چیئرمین نیب نے کہا کہ جب سے عہدہ سنبھالا ہے تو کبھی بھی اپنی ذات پر ہونے والی تنقید پر کوئی گلہ نہیں کیا کیونکہ مجھے معلوم ہے کہ اس طرح کے کاموں میں اس طرح تو ہوتا ہے لیکن دو تین دن سے صورتحال ٹھیک نہیں جس پر بحیثیت چیئرمین نیب میرا خاموش رہنا ادارے کے لیے مناسب نہیں تھا۔انہوں نے کہا کہ میری ذات کے حوالے سے کوئی بات ہوتی تو میں کچھ نہیں کہتا اور آج یہاں موجود نہیں ہوتا۔چیئرمین نیب نے کہا کہ نہ میں ماہر معاشیات ہوں، سیاستدان ہوں نہ میرا ساری زندگی سیاست سے کوئی تعلق نہیں رہا،سیشن جج سے آغاز کیا، قائم مقام چیف جسٹس پاکستان رہا اس کے بعد جو بھی میرا کیریئر ہے وہ ایک کھلی کتاب کی طرح سب کے سامنے ہے۔ان کا کہنا تھا کہ میں 2 چیزوں پر بات کروں گا، پہلی بات تو یہ ہے کہ بزنس کمیونٹی کو بلاجواز ڈرایا جارہا ہے کہ ملک کی موجودہ معاشی زبوں حالی میں نیب کا ہاتھ ہے۔چیئرمین نیب نے کہا کہ یہ بڑا بلند بانگ دعویٰ ہے کہ نیب اور معیشت ساتھ ساتھ نہیں چل سکتے، نیب اور معیشت ساتھ ساتھ ساتھ ساتھ چلتے رہے ہیں اور چلیں گے لیکن نیب اور کرپشن ساتھ ساتھ نہیں چل سکتے۔جسٹس(ر) جاوید اقبال نے کہا کہ نیب نے معیشت کے خلاف آج تک کوئی اقدام نہیں کیا، معیشت کی زبوں حالی میں نیب کا کوئی قصور نہیں۔ان کا کہنا تھا کہ ڈالرکی قیمت اور آئی ایم ایف سےمعاہدے میں نیب کہاں آتاہے؟ نیب انسان دوست ادارہ ہے لیکن بزنس کمیونٹی کو ڈرایا جارہا ہے۔جسٹس (ر) جاوید اقبال نے کہا کہ کاروباری برادری کو بلاوجہ ڈرایا جارہا ہے، نیب نے آج تک کوئی ایسا اقدام نہیں اٹھایا جس سے ملکی معیشت کو نقصان ہو۔ان کا کہنا تھا کہ ہم نے کبھی کسی بڑے کاروباری شخص کو ہراساں نہیں کیا نہ ہی ہماری ہراساں کرنے کی کوئی پالیسی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *