انسداد دہشتگردی عدالت نے واہگہ بارڈر دھماکی کیس کا فیصلہ سنا دیا

واہگہ بارڈر دھماکا کیس، جرم ثابت ہونے پر 3 مجرموں کو 5، 5 بار سزائے موت کا حکم

لاہور: (پاکستان فوکس آن لائن) انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے لاہور واہگہ بارڈر دھماکا کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے 3مجرموں کو سزا سنا دی ہے۔فیصلہ سناتے ہوئے 3 مجرموں کو 5,5 مرتبہ سزائے موت،24 مرتبہ عمر قید اور10,10 لاکھ روپے جرمانہ ادا کرنے کا فیصلہ سنا دیاگیا ہے۔عدالت نے 12 فروری کو کیس کی سماعت کرتے ہوئے فیصلہ محفوظ کر لیاتھا جس کے بعد آج فیصلہ سناتے ہوئے مجرم سعید جان، حسیب اللہ اور حسنین کو سزا سنا دی گئی ہے۔
جبکہ عدالت نے دو مزید افراد شفیق اور غلام حسین کو شک کی بنیاد پر بری کرنے کا حکم بھی جاری کیا ہے۔یاد رہے کہ 2014 میں واہگہ بارڈر پر بم دھاکہ ہوا تھا جس میں70 افراد جان بحق ہو گئے تھے اور 107 افراد زخمی ہوئے تھے۔اس کیس میں پانچ ملزمان کو گرفتار کر لیا گیا تھا جس کے بعد آج انسداد دہشت گردی کی عدالت نے فیصلہ سناتے ہوئے مجرموں کو 5,5 مرتبہ سزائے موت،24 مرتبہ عمر قید اور10,10 لاکھ روپے جرمانہ ادا کرنے کا فیصلہ سنا دیاہے۔
دھماکے کے بعد 3 مجرموں کو 2015 میں پولیس نے کارروآئی کرتے ہوئے گرفتار کر لیا گیا تھا جس کے بعد ا ن کا مقدمہ انسداد دہشت گردی کی عدالت میں زیرسماعت تھا۔کچھ دن قبل12 فروری کو کیس کی سماعت کرتے ہوئے فیصلہ محفوظ کر لیا گیا تھا اور متوقع تھا کہ فیصلہ کچھ دنوں میں ا ٓجائے گا۔آج کیس کی سماعت کرتے ہوئے انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے 3 مجرموں سعید جان، حسیب اللہ اور حسنین کو سزا سنادی ہے۔ عدالت نے 3 مجرموں کو 5,5 مرتبہ سزائے موت،24 مرتبہ عمر قید اور10,10 لاکھ روپے جرمانہ ادا کرنے کا فیصلہ سنا دیا ہے جبکہ دو مزید افراد شفیق اور غلام حسین کو شک کی بنیاد پر بری کرنے کا حکم بھی جاری کیا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *