بھاڑمیں جائے ریفرنس مجھے کوئی طلب نہیں کرسکتا،فضل الرحمان

نیب میں اتنی جرات نہیں کہ وہ ہمیں طلب کرے، اپنے خلاف کرپشن ریفرنس کے سوال پر مولانا فضل الرحمان بھڑک اٹھے،اداروں کو دھمکیاں دینا شروع کردی

سکھر: (پاکستان فوکس آن لائن)جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمٰن کا کہنا ہے کہ وہ احتساب کے نام پر سیاسی کھیل کھیلنے والوں کا احتساب خود کریں گے۔نیب سے متعلق صحافی کے سوال کے جواب میں مولانا فضل الرحمٰن نے کہا کہ ‘نیب ہزار ریفرنس کرے، مجھے کوئی پرواہ نہیں ہے، میں ریفرنسز کے سامنے نہیں جھکوں گا، میں ان کے ریفرنس کی دھجیاں بکھیر دوں گا۔انہوں نے کہا کہ ‘یہ ہوتے کون ہیں کہ ملک میں کوئی شرافت کی سیاست کرے تو اسے سیاست نہ کرنے دیں۔مولانا فضل الرحمٰن نے کہا کہ ‘انصاف کا قتل کرنے والے سے میں انصاف کی توقع نہیں رکھتا، میں انہیں انصاف کے ادارے تسلیم نہیں کرتا۔ان کا کہنا تھا کہ یہ انتقامی سیاست کی بات کرنے والے ہیں، اگر انہوں نے ایسی جرات کی تو میں ان کے سامنے ان کی فائلوں کو پھینک دوں گا، ایسی سیاست میں نے اپنے باپ، دادا سے سیکھی ہے اور نہ خود کبھی ایسا کیا ہے۔
ایک سوال کے جواب میں مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ بھاڑمیں جائے ریفرنس مجھے کوئی طلب نہیں کرسکتا”میں انکے ریفرنسوں کی دھجیاں بکھیر دوں گا یہ ہوتے کون ہیں، میں انہیں چھٹی کا دودھ یاددلادوں گا۔ اگر انہوں نے جرات کی تو۔۔میں ان کی فائلوں کو پھینک دوں گا ۔
انہوں نے کہا کہ ہمیں جمعیت علمائے ہند کی تربیت ہے، ہم نے آزادی کی جنگ لڑی ہے، ہمیں پھر غلام بنانا چاہتے ہیں، ان کا کہنا تھا کہ ہم پاکستان میں کسی ادارے کے غلام ہیں نہ ہم امریکا اور مغرب کی سیاست کے غلام ہیں۔جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ نے کہا کہ یہ جدوجہد جاری رہے گی، ہم مرعوب نہیں ہیں، ہم انہیں بتادیں گے کہ احتساب کس چیز کا نام ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم ان اداروں کا، ان حکمرانوں کا احتساب کریں گے، ان لوگوں کا احتساب کریں گے جو پاکستان میں احتساب کے نام پر سیاسی بدمزگی اور سیاسی کھیل کھیلنا چاہتے ہیں۔

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *