نوسالہ پاکستانی بچے نے کیمسٹری کی تاریخ کا عالمی ریکارڈ قائم کردیا

پاکستان کے لٹل پروفیسر زیدان حامد کا عالمی ریکارڈ

پاکستان کے 9 سالہ بچے زیدان حامد نے کم ترین وقت میں پیریاڈک ٹیبل ترتیب دے کر کیمسٹری کی تاریخ کا عالمی ریکارڈ قائم کردیا۔چھوٹی سی عمر میں تاریخ، فلسفہ اور شاعری جیسے دقیق موضوعات کو ازبر کرنے کے حوالے شہرت پانے والے لٹل پروفیسر زیدان حامد نے کم ترین وقت میں پیریاڈک ٹیبل کی ترتیب کا نیا عالمی ریکارڈ قائم کر دیا ہے۔

9 سالہ زیدان نے کم وقت میں پیریاڈک ٹیبل کے تمام عناصر کو ترتیب دیکر گینز بک آف ورلڈ ریکارڈ میں نام درج کرا لیا۔ انہوں نے 5 منٹ 46 سیکنڈز میں یہ کارنامہ سرانجام دیا، اس سے قبل یہ اچھوتا ریکارڈ 15 اگست 2018 میں ڈاکٹر ولاز نے پہلی مرتبہ بنایا تھا جن کا تعلق انڈیانا کی فورنی ہالز آف کیمیکل انجینئرنگ سے ہے، انہوں نے 8 منٹس 36 سیکنڈز میں عناصر کو ترتیب دیا تھا۔ان کا ریکارڈ لبنان کے علی غدر نے 25 فروری 2019 میں توڑا تھا، انہوں نے پیریاڈک ٹیبل کے 150 سال مکمل ہونے پر 6 منٹ 44 سیکنڈز میں اسے ترتیب دیا تھا۔زیدان حامد نے کم ترین وقت میں پیریاڈک ٹیبل ترتیب دے کر ایک نئی تاریخ رقم کی ہے۔ انہوں نے آج دو کوششیں کیں اور ہر بار نیا ریکارڈ قائم کیا۔

زیدان حامد نے پہلے 6 منٹ 11 سکینڈ میں اور پھر دوسری کوشش میں 5 منٹ 41 سکینڈز میں ٹیبل دوبارہ ترتیب دیا۔گینز بُک آف ورلڈ ریکارڈ کی تقریب میں ان کے والد نے بھی شرکت کی ۔ اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ زیدان نے عالمی ریکارڈ قائم کرنے کے لئے سخت محنت کی، انہوں نے اپنے بیٹے کو مسلسل پڑھایا، انہیں اپنے بیٹے کی ذہانت پر فخر ہے۔انہوں نے کہا کہ جب لبنان کے علی غدر نے ریکارڈ توڑا تھا تب وہ مایوس ہو چکے تھے لیکن زیدان نے کہا بابا میں یہ ریکارڈ توڑوں گا۔زیدان کے والد نے کہا کہ وہ اس کامیابی پر خدا کا شکر ادا کرتے ہیں اور پورے پاکستان کو اس پر مبارکباد پیش کرتے ہیں۔زیدان حامد نے اس موقع پر کہا کہ وہ اپنے والدین اور اساتذہ کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔ پیریاڈک ٹیبل کو یاد کرنا بہت مشکل ہے اور یہ بچوں کا کھیل نہیں ہے۔
زیدان حامد نے کہا مسلسل پریکٹس انسان کو بڑی کامیابی دیتی ہے، میں نے کبھی ہمت نہیں ہاری، بار بار کوشش کی اور آج کامیاب ہو گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *