لاہورمیں کورونا تباہی مچانے کیلئے تیار،6لاکھ سے زائد افراد متاثر ہونے کا خدشہ

محکمہ صحت کی جانب سے وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کو بھیجی گئی سمری میں انکشاف

لاہور:(پاکستان فوکس آن لائن) محکمہ صحت کی جانب سے وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کو بھیجی گئی سمری میں انکشاف کیا گیا ہے کہ سمارٹ سیمپلنگ میں مثبت ٹیسٹوں کی شرح چودہ فیصد سے زائد ریکارڈ کی گئی ہے۔
صوبہ پنجاب کے دالحکومت لاہور میں 6لاکھ سے زائد کورونا کے مریض ہونے کا انکشاف سامنے آیا، سمری میں کہا گیا کہ لاہور کا کوئی علاقہ ایسا نہیں جس میں کورونا کا مریض نہ ہو۔تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کو بھیجی گئی سمری میں انکشاف کیا گیا ہے کہ لاہورمیں 6 لاکھ سے زائد کورونا کے مریض ہوسکتے ہیں ، کورونا مریضوں کی سمری اسمارٹ سیمپلنگ ،رینڈم سیمپلنگ کے نتائج کی بنیاد بنائی گئی۔سمری میں کہا گیا ہے کہ لاہور کے چند علاقوں میں کورونا مریضوں کی شرح 6 فیصد رہی، چندایک علاقوں میں مثبت ٹیسٹ کی شرح 14.7فیصد ہے، لاہور کا کوئی علاقہ ایسا نہیں جس میں کوروناکامریض نہ ہو۔سمری کیساتھ ٹیکنیکل ورکنگ گروپ کی سفارشات بھی بھجوائی گئی ہیں۔
دوسری جانب پنجاب میں کورونا کے 1184 نئے کیس سامنے آئے ، جس کے بعد پنجاب میں کورونا کے کنفرم مریضوں کی تعداد 26240 ہو گئی جبکہ کورونا سے مزید 22 افراد جاں بحق ہوئے اور اموات کی تعداد497ہو گئی۔ترجمان ہیلتھ کیئر کے مطابق لاہور میں کورونا وائرس کے 727نئے کیس سامنے آئے جبکہ ننکانہ صاحب میں 8، قصور 11، شیخوپورہ 7، راولپنڈی میں 77، گوجرانوالہ میں74 اور سیالکوٹ میں 47نئے کیس سامنے آئے۔ترجمان کے مطابق پنجاب میں ابتک 239173 ٹیسٹ کئےجا چکے ہیں جبکہ کورونا کو شکست دینے والوں کی تعداد6124ہوگئی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *