وفاقی کابینہ نے’’ ‘کامیاب جوان ‘‘پروگرام کی اصولی منظوری دے دی

اسلام آباد: (پاکستان فوکس آن لائن) وفاقی کابینہ نے ’کامیاب جوان‘ پروگرام اور اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) کے 15 مئی کے اجلاس کے فیصلوں کی اصولی منظوری دے دی۔وفاقی کابینہ کا اجلاس وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت ہوا جس میں 15 مئی کو ہونے والے اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) اجلاس کے فیصلوں کی توثیق کی۔
وفاقی کابینہ نے “کامیاب جوان پروگرام” کی اصولی منظوری دے دی۔ وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے امور نوجوانان عثمان ڈار نے کابینہ کو “کامیاب جوان پروگرام” پر بریفنگ دی۔انہوں نے ’’کامیاب جوان پروگرام‘‘ کو ملک بھر کے نوجوانوں کے لئے اچھی اور بڑی خبر قرار دیتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم کے بعد کابینہ نے بھی پروگرام کی توثیق کر دی ہے اور مشکل معاشی حالات کے باوجود اس پروگرام کے لیے 100 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ گزشتہ 8 ماہ کی انتھک محنت کے بعد جامع پروگرام تشکیل دیا گیا ہے جس سے 10 لاکھ نوجوان براہ راست مستفید ہو سکیں گے اور وزیر اعظم کا نوجوانوں کو با اختیار بنانے کا مشن آگے بڑھے گا۔ عثمان ڈار نے نوجوانوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ کابینہ سے خطیر رقم کی منظوری نوجوانوں کی بڑی کامیابی ہے، نوجوان حکومتی منصوبے سے فائدہ اٹھانے کے لیے تیار ہو جائیں کیونکہ اس کی بدولت ملک کے نوجوانوں کی قسمت بدل سکتی ہے۔

وزیراعظم عمران خان کی معاون خصوصی برائے اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا کابینہ اجلاس کے بعد پریس کانفرنس میں کہنا تھا کہ وفاقی کابینہ اجلاس میں ڈالر کی بڑھتی قدر پر غور کیا گيا، موجودہ حکومت کو جو خراب معاشی صورتحال ملی، اس پر بھی غور کیا گیا، وزیراعظم نے عزم دہرایا کہ مشکل صورتحال سے نکلنے کے لیے عوام کی طاقت ساتھ ہے۔انہوں نے کہا کہ مشیر خزانہ ماضی کی حکومتوں کے معیشت پر خودکش حملے پر جلد ہی خود بات کریں گے، ماضی کی حکومت نے معیشت کے لیے بارودی سرنگیں بچھائیں۔ان کا کہنا ہے کہ وفاقی کابینہ نے ’کامیاب جوان‘ پروگرام کی منظوری دی ہے جس کے تحت نوجوانوں کے لیے روزگار کے مواقع پیدا کیے گئے ہیں، اس پروگرام میں خواتین کے لیے 25 فیصد کوٹا رکھا گیا ہے، بینک پانچ لاکھ تک چھ فیصد اور پانچ سے پچاس لاکھ تک آٹھ فیصد شرح سود پر قرض دیں گے۔معاون خصوصی برائے اطلاعات نے بتایا کہ پنجاب اور کے پی کے اندر نیا لوکل گورنمنٹ بل متعارف کرادیا گیا ہے، اسلام آباد میں لوکل گورنمنٹ بورڈ کی تعیناتی کی منظوری دی گئی ہے اور اسد عمر کو اسلام آباد لوکل بورڈممبر تعینات کیا گیا ہے۔ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ شہید ذوالفقار علی بھٹو یونیورسٹی کے وائس چانسلر اور کراچی کی بینکنگ کورٹ کے جج کی تعیناتی کی منظوری بھی دی گئی۔انہوں نے کہا کہ کابینہ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ وفاق کے تحت نئی تعلیمی پالیسی ترتیب دی جائے گی، وزیرتعلیم آئندہ چند روز میں اس پر بریفنگ دیں گے۔
مشیر اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے ذرائع ابلاغ کو کابینہ اجلاس کے بارے میں بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ کابینہ کے اجلاس میں 10 نکاتی ایجنڈے میں 9 پربات ہوئی اور تعلیمی پالیسی پر بھی بحث کی گئی۔وزیرتعلیم نےمفصل اورجامع تعلیمی پالیسی کابینہ میں پیش کی۔ ان کا کہنا تھا کہ جہالت کےاندھیروں نے پاکستان کو اپنی لپیٹ میں لے رکھا ہے۔ ملک کی ترقی وخوشحالی کا انحصارمعیاری تعلیم پر ہے۔فردوس عاشق اعوان نے میڈیا کو بتایا کہ حکومت نے نوجوانوں کیلیے’کامیاب نوجوان‘ پروگرام کا آغاز کیا ہے جو ملک میں معاشی انقلاب کا سبب بنے گا۔پروگرام کی تفصیل بتاتے ہوئے مشیر اطلاعات نے کہا کہ حکومت 18 سے 35سال کے نوجوانوں کو بااختیار بنانا چاہتی ہے جس کیلیے بینک نوجوانوں کو 6 فی صد شرح سود پر قرض دے گا۔ آسان شرائط پر نوجوانوں کو قرضے دیئے جائیں گے اور یوتھ پروگرام میں 25فی صد قرضہ خواتین کے لیے ہوگا۔ذرائع کے مطابق وفاقی کابینہ نے اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) کے گزشتہ اجلاس میں ہونے والے فیصلوں کی توثیق کر دی ہے مالیاتی پالیسی کی ایکسٹرنل کمیٹی کے ممبران کی نامزدگیوں کی بھی منظوری دی۔کابینہ نے اسلام آباد لوکل گورنمنٹ بورڈ کی تشکیل نو اور بینکنگ کورٹ کراچی کے جج کی تعیناتی کی بھی منظوری دی۔وفاقی کابینہ نے ملک بھر میں مدارس اصلاحات پر بھی اطمینان کا اظہار کیا جبکہ وزیر اعظم عمران خان نے تمام وزرا کو ایک بار پھر کفایت شعاری مہم پر عمل کرنے کی ہدایت کی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *