سونیا گاندھی کا بھارتی وزیر داخلہ سے مستعفی ہونے کا مطالبہ

اروند کیجریوال نے بھی معاملے کو سنبھالنے کے لیے مناسب انتظامات نہیں کیے

نئی دہلی: (پاکستان فوکس آن لائن) بھارتی دارالحکومت نئی دہلی میں مسلم کش فسادات کے بعد کانگریس کی سربراہ سونیا گاندھی نے وزیر داخلہ امیت شاہ سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کر دیا۔
تفصیلات کے مطابق دلی میں مسلم کش فسادات جاری ہیں جس میں اب تک مجموعی طور پر 20 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں لیکن مودی سرکار کے کان پر جوں تک نہیں رینگ رہی اور وہ اسے روکنے کی بجائے خاموشی تھامے بیٹھے ہیں تاہم بھارتی اپوزیشن کانگرس کی رہنما سونیا گاندھی نے بڑا مطالبہ کر دیا ہے ۔
کانگریس ہیڈکوارٹر میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے سونیا گاندھی نے مودی سرکار خصوصا وزیر داخلہ امیت شاہ کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا۔سونیا گاندھی نے کہا کہ وزیر داخلہ ایک ہفتے سے کیا کر رہے تھے؟ جب حالات خراب ہو رہے تھے تو پیرا ملٹری فورسز کو کیوں نہیں بلایا گیا؟انہوں نے کہا کہ حالات خراب ہونے کی ذمہ داری مرکزی حکومت اور وزیر داخلہ پر عائد ہوتی ہے، کانگریس مطالبہ کرتی ہے کہ وزیر داخلہ امیت شاہ فوری طور پر مستعفی ہوں۔
نئی دہلی کی انتظامیہ کو بھی آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کانگریس پارٹی کی سربراہ کا کہنا تھا کہ اروند کیجریوال کی حکومت نے بھی معاملے کو سنبھالنے کے لیے مناسب انتظامات نہیں کیے۔سونیا گاندھی کا کہنا تھا نئی دہلی کے وزیراعلیٰ کو متاثرہ علاقوں میں جا کر لوگوں سے براہ راست رابطے میں ہونا چاہیے تھا لیکن انہوں نے ایسا مناسب نہ سمجھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *