جنوبی ایشیا میں دیرپا امن کا قیام طویل تنازعات حل کرنے سے ممکن ہے، آرمی چیف

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کا کمانڈ اینڈ اسٹاف کالج کوئٹہ کا دورہ

راولپنڈی: (پاکستان فوکس آن لائن)آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ جنوبی ایشیا میں دیرپا امن کا قیام طویل تنازعات کو حل کرنے سے ممکن، علاقائی امور طے کرنے کیلئے عالمی حمایت اور عزم ضروری ہے۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق پاک فوج کے سپہ سالار جنرل قمر جاوید باجوہ نے کمانڈ اینڈ سٹاف کالج کوئٹہ کا دورہ کیا۔ کوئٹہ پہنچنے پر کمانڈر سدرن کمانڈ لیفٹیننٹ جنرل محمد وسیم اشرف نے آرمی چیف کا استقبال کیا۔ کمانڈنٹ کمانڈ اینڈ سٹاف کالج کوئٹہ لیفٹیننٹ جنرل ندیم احمد انجم بھی اس موقع پر موجود تھے۔
آئی ایس پی آر کے مطابق اس موقع پر آرمی چیف نے سٹاف کالج کے اساتذہ اور افسروں سے خطاب میں سیکیورٹی چیلنجز پر بھی بات کی۔ ان کا کہنا تھا کہ بہترین تربیت کی حامل پیشہ وارانہ صلاحیت رکھنے والی فوج ہی امن کی ضمانت ہوتی ہے۔ عوام کی حمایت کے ساتھ پاک فوج امن کی ضامن فورس ہے۔
آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ جنوبی ایشیا میں دیرپا امن کا قیام طویل تنازعات کو حل کرنے سے ہی ممکن ہے۔ یہ اسی وقت ممکن ہے جب علاقائی امور طے کرنے کے لیے عالمی حمایت اور عزم بھی ساتھ ہو۔ان کا کہنا تھا کہ موثر قومی کوششوں سے ہی پاکستان خوشحالی اور ترقی کی جانب بڑھ سکتا ہے۔ نئے چیلنجز پر قابو پانے کے لیے پیشہ وارانہ تربیت اور جدید ٹیکنالوجی سے آراستہ رہنا وقت کی ضرورت ہے۔جنرل قمر جاوید باجوہ کا کہنا تھا کہ پاک فوج دیگر ریاستی اداروں کے ساتھ مل کر کورونا وبا کے چیلنج سے نبرد آزما ہونے کے لیے ہر کارروائی کرے گی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *