وفاقی کابینہ نے پی ٹی وی لائسنس فیس میں اضافہ مؤخر کردیا

وزیراعظم نے میڈیا کے بقایاجات ایک ہفتے میں دینے کی ہدایت کی ہے، شبلی فراز

اسلام آباد: (پاکستان فوکس آن لائن) وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں وزیراعظم نے پی ٹی وی فیس میں اضافے کا فیصلہ موخر کردیا۔وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت ہونے والے وفاقی کابینہ کے اجلاس میں قومی ادارہ صحت ری آرگنائزیشن ایکٹ 2020 کی منظوری دے دی گئی جبکہ کابینہ نے نیشنل ہیلتھ ایمرجنسی رسپانس ایکٹ 2020 کی منظوری بھی دے دی۔کابینہ نے اسلام آباد کیپٹل ٹیرٹری وقف پراپرٹیز ایکٹ 2020 کی منظوری کے ساتھ ساتھ کنسٹرکشن انڈسٹری کو دی گئی مراعات کی تشہیر کےلئے سپلیمنڑی گرانٹ کی منظوری بھی دے دی۔ وفاقی کابینہ نے وزارت خزانہ کی جانب سےٹریزری سنگل اکاؤنٹ رولز 2020 منظور کر لیا جبکہ ایف اے ٹی ایف سے متعلق کئی قوانین میں ترامیم کی منظوری دے دی گئی اورکمپنیز ایکٹ 2017 میں ترامیم کا مسودہ اور انٹی منی لانڈرنگ دوسرا ترمیمی بل 2020کا مسودہ بھی منظور کر لیا گیا۔وفاقی کابینہ کے اجلاس میں انسداد دہشتگردی 1997ایکٹ میں ترامیم کی منظوری دے دی گئی جبکہ کابینہ نے ضابطہ فوجداری 1898 میں تحقیقاتی اختیارات دینے کی ترمیم بھی منظور کرلی۔تاہم وفاقی کابینہ کے اجلاس میں وزیراعظم عمران خان نے پی ٹی وی فیس میں اضافے کا فیصلہ موخر کردیا۔واضح رہے چند روز قبل وفاقی حکومت کی طرف سے پاکستان ٹیلی ویژن (پی ٹی وی) کی فیس 35 روپے سے بڑھا کر 100 روپے کر دی گئی تھی جس کے بعد سوشل میڈیا سمیت ہر طرف شور مچا ہوا تھا اور حکومت سے اس اضافے کو فوری طور پر واپس لینے کا مطالبہ کیا گیا تھا۔ فیس کے اضافے پر ملکی سیاستدانوں نے بھی صدا بلند کی تھی اور حکومت پر کڑی تنقید کی تھی۔
کابینہ اجلاس کے بعد میڈیا بریفنگ کے دوران وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات نے بتایا کہ کابینہ نے ٹی وی لائسنس فیس بڑھانے کا فیصلہ اگلے ہفتے تک مؤخر کردیا۔انہوں نے کہا کہ آٹا کی قیمتوں میں اضافے سے متعلق وزیراعظم نے متعلقہ وزارتوں سے دریافت کیا اور آٹے کی قیمتوں میں توازان رکھنے کی ہدایت کی۔شبلی فراز نے بتایا کہ حکومت کی کوشش ہے کہ آٹے کی قیمت زیادہ نہ ہو، گندم کی فراہمی بروقت اور اس کی ترسیل میں کوئی رکاوٹیں نہ ہو، طلب اور رسد میں فرق کو ختم کرنے کے لیے نجی اور حکومت ادارے درآمد کرسکتے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ گندم ذخیرہ اندوزوں کی حوصلہ شکنی کے لیے 4 لاکھ ٹن گندم کے آرڈر بھی ہوچکے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ اس سلسلے میں حکومت سندھ سے درخواست کہ وہ گندم کی درآمد پر ڈیڑھ روپے کی ایکسائز ڈیوٹی کی چھوٹ دے۔وفاقی وزیر نے کہا کہ پاکستان اسٹیل سمیت دیگر ادارے عظمت کے نشان ہیں، ماضی کی حکومتیں ان اداروں کو بہتر کرنے کی بجائے تباہی کی طرف لے گئے۔وفاقی وزیر نے ایجنڈے سے متعلق بتایا کہ کابینہ نے کیش مینجمنٹ اینڈ ٹریجریز اینڈ سنگل اکاؤنٹ رولز 2009 کی منظوری دی ہے جس کے تحت تمام وزارت، ڈویژن اور شعبے کا ایک اکاؤنٹ ہوگیا جس میں سے رقوم جاری کی جائیں گی۔انہوں نے سنگل ٹریجری اکاؤنٹ کی منظوری کو بڑا اقدام قرار دیا۔سینیٹر شبلی فراز نے بتایا کہ کابینہ نے انسداد منی لانڈرنگ سے متعلقہ قوانین میں ترمیم کے لیے مجوزہ بل 2020 کی بھی منظوری دی جس کے تحت منی لانڈرنگ اور دہشت گردوں کی معاونت کی روک تھام کو موثر بنانا ہے۔انہوں نے امید ظاہر کی کہ منی لانڈرنگ کے خلاف قوانین کو مزید سخت بنایا جائے گا۔
علاوہ ازیں وفاقی وزیر نے بتایا کہ انسداد دہشت گردی ایکٹ 1997 اور کورٹ آف کرمنل پروسیجر 1898 میں بھی مجوزہ ترامیم کی منظوری دی گئی۔انہوں نے نیا پاکستان ہاؤسنگ اسکیم سے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ سستے مکانات کی فراہمی ملک کا بڑا مسئلہ ہے کیونکہ بینکس عام طورپر تعمیراتی صنعت کو اتنا قرضہ نہیں دیتے۔سینیٹر شبلی فراز نے کہا کہ تعمیراتی صنعت پورے ملک کی معیشت کو چلاسکتی ہے کیونکہ تعمیراتی صنعت سے 40 سے زیادہ صنعتیں جڑی ہوئی ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ ‘اس سے قبل پاکستان میں ایسا کوئی کام نہیں ہوا اس لیے نیا پاکستان ہاؤسنگ اسکیم کے آغاز میں غیرمعمولی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *